تازہ ترین

چکورہ لتر پلوامہ میں معرکہ آرائی، لشکر کمانڈر جاں بحق

ساتھی فرار ،برفباری کے دوران پُر تشدد جھڑپیں ، سنگباری اور شلنگ

7 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

شاہد ٹاک
شوپیان//جنوبی ضلع پلوامہ کے چکورہ لتر علاقے میں بدھ کومختصرمعرکہ آرائی کے دوران مقامی لشکر کمانڈر جاں بحق ہو گیا جبکہ اسکا ساتھی فورسز کو چکمہ دیکر فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ۔ علاقے میں جھڑپ کے ساتھ ہی  مظاہرین اور فورسز کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔ضلع پلوامہ میں موبائیل انٹر نیٹ خدمات بند کی گئیں ۔

 تصادم آرائی

پولیس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ بدھ کی شام قریب4بجے انہیں چکورہ میں جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملی جس کے بعد55 ، سی آر پی ایف اور ایس او جی پلوامہ نے علاقے کو محاصرے میں لیا ۔تاہم جونہی علاقے میں فورسز نے تلاشی آپریشن شروع کیا اور وارننگ شارٹس فائر کئے تو وہاں موجود جنگجوئوں نے فرار ہونے کی کوشش میں فورسز پر فائرنگ کی ۔ گولیوں کی گن گرج کے ساتھ ہی طرفین کے مابین کچھ منٹوں تک گولیوں کا تبادلہ ہوا ۔پولیس نے بتایا کہ گولیوں کا تبادلہ تھم جانے کے ساتھ ہی جھڑ پ کے مقام سے فورسز نے ایک جنگجو کی نعش بر آمد کی جس کی شناخت لشکر کمانڈر عرفان احمد شیخ ساکن چکورہ پلوامہ کے بطور ہوئی ۔پولیس کا کہنا ہے کہ عرفان احمد لشکر کا ضلع کمانڈر تھا جو قریب ایک سال سے سرگرم تھا۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ مہلوک جنگجو کا ایک ساتھی فورسز کو چکمہ دیکر فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ۔فورسز نے بعد میں تلاشی کارروائی بھی عمل میں لائی اور فرار ہونے والے جنگجوئوں کو ہر ممکن کوشش کی گئی تاہم کسی بھی جگہ انہیں کامیابی ہاتھ نہیں آئی ۔

جھڑپیں

 ادھر علاقے میں محاصرہ شروع ہوتے ہی برفباری کے دوران ہی نوجوان سڑکوںپر نکل آئے او رپولیس و فورسز پر سنگ باری شروع کی ۔تشدد پر اُتر آئی بھیڑ کو منتشر کرنے کیلئے پولیس و فورسز نے آنسو گیس کے گولے داغے ، پیلٹ گولیوں اور پیپر گیس کا بھی استعمال کیا ۔یہاں کافی دیر تک جھڑپوں کا سلسلہ جاری رہا۔

پولیس بیان

پولیس کے مطابق ایک مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد سیکورٹی فورسز اور پولیس نے بدھ کے بعد دوپہر چکورہ لتر میں تلاشی آپریشن شروع کیا جس دوران علاقے میں موجود جنگجوئوں نے حفاظتی عملے پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی۔ ابتدائی گولیوں کے تبادلے ایک جنگجو ہلاک
 ہوا۔جس کی شناخت لشکر کمانڈر عرفان احمد شیخ ولد گلزار احمد شیخ ساکن چکورہ پلوامہ کے بطور ہوئی ۔پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔ جھڑپ کی جگہ بڑی مقدار میں اسلحہ و گولہ بارود اور قابلِ اعتراض مواد برآمد کرکے ضبط کیا گیا۔