تازہ ترین

افضل گورو کی چھٹی برسی پر کشمیر میں ہڑتال سے معمولات ٹھپ

9 فروری 2019 (03 : 01 PM)   
(      )

عظمیِ نیوز ڈیسک

سرینگر/علیحدگی پسندوں کی اپیل پر سنیچر کو وادی کشمیر میں محمد افضل گورو کی چھٹی برسی کے موقع پر مکمل ہڑتال کی وجہ سے معمولات ٹھپ ہوکر رہ گئے ہیں۔

گورو کو پارلیمنٹ حملے میں ملوث قرار دینے کے بعد دلی کے تہار جیل میں2013میں آج ہی کے دن تختہ دار پر لٹکایا گیا تھا۔

گورو کو بعد میں جیل احاطے کے اندر ہی دفن کیا گیا تھا۔

سید علی گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل علیحدگی پسندوں کے وفاق مشترکہ مزاحمتی قیادت نے آج ہڑتال کی کال  دے رکھی ہے۔

 لیڈران نے اپنی اپیل میں گورو کی باقیات قانونی ورثاء کو لوٹانے کی مانگ کی ہے۔

گورو کے گھر میں اُس کا بیٹا، غالب گورو اور اہلیہ تبسم گورو ہیں، جو تارزو سوپور میں رہتے ہیں۔

حکام نے میرواعظ کو خانہ نظر بند جبکہ ملک کو تھانہ نظر بند کر رکھا ہے جبکہ گیلانی کئی برس سے خانہ نظر بند ہیں۔

اطلاعات کے مطابق پوری وادی میں دکان اور کاروباری ادارے مقفل ہیں جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب ہے۔

حکام نے سوپور،سرینگر اور بارہمولہ سمیت کئی حساس مقامات پر فورسز کی اضافی تعداد تعینات کر رکھی ہے۔