تازہ ترین

عمران مخلص ہیں تو بھارت کے سپرد کریں:سشما

15 مارچ 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//بھارت نے مسعود اظہر کی حوالگی سے پاکستانی وزیراعظم عمران خان کو پیغام دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وہ اتنے ہی سخی اور کھْلے دل کے مالک ہیں تو مسعود اظہر کو ہمارے حوالے کر دیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت تب تک پاکستان کے ساتھ مذاکرات نہیں کر سکتا جب تک پاکستان اپنی سرزمین پر موجود دہشتگرد تنظیموں اور گروپس کے خلاف کارروائی عمل میں نہ لائے۔ سی این ایس مانیٹر نگ ڈیسک کے مطابق نئی دہلی میں ایک پروگرام کے دوران بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج کا کہنا تھا کہ کچھ لوگوں کا ماننا ہے کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان صاف دل شخصیت ہیں۔اگر وہ اتنے ہی سخی ہیں تو جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کو بھارت کے حوالے کر دیں، دیکھتے ہیں کہ عمران خان کتنے سخی ہیں۔ ہم پاکستان کے ساتھ بات کرنے کے لیے تیار ہیں لیکن صرف تب جب پاکستان دہشتگردوں سے پاک ہو گا کیونکہ مذاکرات اور دہشتگردی دونوں ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے۔بھارتی دراندازی پر پاکستان کی جانب سے جواب ملنے سے متعلق سوال کے جواب میں بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے کہا کہ بھارت نے پاکستان میں جیش محمد کے ٹھکانے کو ٹارگٹ کیا تھا لیکن پاک فوج نے جیش محمد کی طرف سے بھارت میں کارروائی کیوں کی؟ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان صرف اپنی سر زمین دہشتگردوں کو پناہ ہی نہیں دیتا ، بلکہ جب کوئی ملک ان دہشتگردوں کے خلاف کوئی کارروائی کرتا ہے تو پاکستان ان دہشتگردوں کی طرف سے حملہ کرتا ہے۔ انہوں نے حکومت ہند کی پالیسی کو بالکل واضح بتاتے ہوئے کہا’’ہم دہشت گردی پر بات نہیں کرنا چاہتے ہیں، ہم اس پر کارروائی چاہتے ہیں۔بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے مزید کہا کہ پاکستان کو اپنی فوج اور آئی ایس آئی کو کنٹرول کرنے کی ضرورت ہے جو پاکستان اور بھارت کے مابین دو طرفہ تعلقات تباہ کرنے پر تْلے ہوئے ہیں۔ سشما سوراج نے کہا کہ پلوامہ کے بعد بھی ایسے دوہرے کردار کی کئی مثالیں ہیں۔ ایک زاویہ پر پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ جیش محمد سربراہ مسعود اظہر پاکستان میں ہے اور دوسری طرف، پاک فوج نے کہا کہ جیش محمد کا پاکستان میں کوئی وجود نہیں ہے۔پاکستان کے خلاف 27فروری کے ایئر اسٹرائیک پر سوال اٹھاتے ہوئے انہوں نے کہا’’جیش محمد کی جانب سے پاکستانی فوج نے ہم پر حملہ کیوں کیا؟‘‘ انہوں نے کہا کہ پاکستان نہ صرف جیش محمد کو اپنی زمین پر سرگرمیاں چلانے کی اجازت دیتا ہے بلکہ اسے رقومات بھی دستیاب کرتا ہے۔ اور اگر کوئی ملک جوابی کارروائی کرتا ہے، تو پاکستان اس دہشت گرد تنظیم کی جانب سے اس پر حملہ کرتا ہے۔انہوں نے پوچھا’’آپ کو حملہ کیوں کرنا پڑا، کیا آپ نے مسعود اظہر کی جانب سے انتقام نہیں لیا۔