جامعہ جموں میں منعقدہ’جشن گلزار ‘اختتام پذیر

اردو زبان نے ملکی تحریک آزادی میں ایک اہم رول ادا کیا :گلزار

15 مارچ 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
 جموں //جموں یونیورسٹی کی جانب سے منعقدہ 3روزہ ’جشن گلزار‘اختتام پذیر ہو گیا ۔جموں یونیورسٹی اور ڈیپارٹمنٹ آف سٹوڈنٹ ویلفیئر کے اشتراک سے شعبہ اردو کی جانب سے گیان چند سیمینار ہال میں منعقدہ ختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے معروف مصنف گلزار نے کہاکہ اردو زبان نے ہندوستانی تحریک آزادی میں ایک اہم رول ادا کیا جبکہ مذکورہ زبان ہندوستانی تہذیب کا اہم جز ءہے جوکہ ہندوستان میں پیدا ہوئی اور اس وقت دنیا کے کئی ایک ممالک میں بولی جارہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ اردو زبان کو کسی ایک مذہب یا فرقہ کےساتھ نہیں جوڑا جاسکتا کیونکہ اس زبان نے بغیر کسی مذہب و ملت کے کئی ایک شاعروں کو جنم دیا ہے جنہوں نے اس زبان کو فروغ دینے میں ایک رول ادا کیا ہے ۔انہوں نے اردو زبان کی جانب سے فرقہ ورانہ ہم آہنگی کو برقرار رکھنے اور قومی یکجہتی کو بحال رکھتے ہوئے ملکی عوام کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کیا ۔موصوف نے نوجوان نسل کو تلقین کرتے ہوئے کہاکہ وہ اردو زبان کے فروغ کے ساتھ ساتھ بولنے اور سمجھنے و رسم الخط محفوظ رکھنے کی جانب توجہ دیں ۔انہوں نے والدین سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ نئی نسل کو اردو زبان کی جانب راغب کرنے کی طرف توجہ دین تاکہ اس مشترکہ تہذیت کو مزید فروغ مل سکے ۔معروف مصنف نے جموں یونیورسٹی کے وائس چانسلر اور شعبہ اردو کے ایچ او ڈی پروفیسر شہاب عنایت ملک کی جانب سے زبان کے فروغ میں دلچسپی اور تین روزہ جشن گلزار کے عنوان سے پروگرام کا اہتمام کرنے کی تعریف کی ۔پروگرام میں بطور مہمان خصوصی شامل ہو ئے لکشدیپ کے گورنر فاروق خان نے مصنف گلزار کو ایک لیجنڈ قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اردو زبان کے فروغ کےلئے ایک ایسا رول ادا کیا ہے جس کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔ان کے علاوہ ڈاکٹر تکی عابدی ،جموں یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر منوج کمار دھر ،ودیگران نے بھی اختتامی تقریب سے خطاب کیا ۔

تازہ ترین