مزید خبرں

15 مارچ 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

پوچھال کشتوڑ میں پانی کی قلت کو لیکر لوگ سراپا احتجاج

اے آئی بٹ
کشتواڑ//قصبہ میں محکمہ صحت عامہ کی ناقص کار کردگی کی وجہ سے ضلع کے مختلف حصوں بشمول موضع پوچھل میں پانی کی قلت ایک سنگین مسئلہ اختیار کر گیا ہے۔پوچھال (پنچایت اے۔2 ) کے مکینوں  نے محکمہ صحت عامہ پرپانے کی پانی کے مسئلہ کے تئیں غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کرنے کی مذمت کی کیونکہ علاقہ میں مہینے میں10  سے لیکر  15  دنوں کے وقفہ کے بعد پانی سپلائی کی جاتی ہے، جس سے لوگوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا ہے ۔موضع پوچھال کے عوام نے کہا کہ علاقہ میں پینے کے پانی کی شدید قلت ہے اور محکمہ صحت عامہ عوام کو پانی مہیا کرنے میں موثر اقدام اُٹھانے میں ناکام رہا ہے۔ مکینوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ محکمہ صحت عامہ پانی کی تقسیم کاری میں امتیاز برت رہی ہے ۔موضع پوچھال پنچایت اے۔2کی سرپنچ کملیش کماری نے کہا کہ موضع کے مقامی وفود بھی ان سے پانی کی شکایت لیکر آتے ہیں ،اُس نے مزید کہا کہ میں نے انہیں یہ مسئلہ متعلقہ حکام کے ساتھ اُٹھانے کی یقین دہانی کی ہے۔ دریں اثناموضع کے مکینوں کی شکایت ہے کہ انہیں واٹر پمپوں پر انحصار کرنا پڑتا ہے۔۔علاقہ کی مجموعی آبادی 2000 ہے لیکن علاقہ میں پانی کی سنگین قلت ہے۔علاقہ کے تمام لوگوں کو ایک پمپ سے پانی لانے کیلئے ایک کلو میٹر کا سفر طے کرنا پڑتا ہے۔  انہوں نے متعلقہ حُکام سے علاقہ میں پانی کی معقول سپلائی یقینی بنانے کی اپیل کی اور مستقبل میں پانی کی قلت کے بارے میں ہوشیار رہنے کو کہا ہے۔
 
 

پکل ڈول پروجیکٹ زمین مالکان کا احتجاج جاری

نیوز ڈیسک 
کشتواڑ//پکل ڈول پائور پروجیکٹ کواڑ ،ناگسینی کے زمین مالکان کی جانب سے احتجاج چھٹے روز بھی جاری رہی۔مظاہرین نے افکان منیجمنٹ کے خلاف نعرے بازی کی اور مزید کہا کہ افکان کمپنی پروجیکٹ میں غیر مستحق افراد کو ملازمت دیتے ہے۔اسکے علاوہ پروجیکٹ کیلئے
 چور دروازہ سے بھرتی کرکے تمام زمین مالکان کو نظر انداز کیاگیاہے۔زمین مالکان نے اس موقعہ پر کہا کہ افکان کمپنی زور ،دبا وکی پالیسی اپنا رہی ہے،جبکہ بھرتی بھی چور دروازے سے کی جاتی ہے اور زمین مالکان کو فراموش کیا جاتا ہے۔احتجاج میں دھیرج کمار، وجے کمار، شو کمار، پنکو کمار، شیر سنگھ،اشونی کمار، سمن کمار،دیپک کمار، راج کمار، سنجیت کمار، سنیل کمار،روشن لعل، ارجن کمار، دیس راج،و دیگران بھی شامل تھے۔ایک سماجی کارکن رندیپ بھنڈاری نے کہا کہ یہ بڑے دُکھ کی بات ہے کہ ہم نے بجلی پروجیکٹ کے لئے اراضی دی ہے لیکن افکان کمپنی نے ہمیں نظر انداز کیا ہے اور سیاسی رسوخ پر تعیناتی کی ہے،جسے کسی بھی قیمت پر برداشت نہیں کیا جائے گا
 

کشتواڑ میں وٹس ایپ پر غلط خبر پھیلانے کیخلاف معاملہ درج 

ڈار محسن 
کشتواڑ//قصبہ کے ایک کاروباری نے ایک سرگرم نیشنل کانفرنس کارکن کے خلاف سوشل میڈیا پر ایک وٹس ائپ پرخبر چلانے کے خلاف پولیس میں معاملہ درج کیا۔شکایت کنندہ نے خبر کو بے بنیاد اور جھوٹی قرار دیا۔تفصیلات کے مطابق شکایت موضع سرکوٹ کے ایک کاروباری یاسر احمد نے ایس ایچ او کشتواڑ کے پاس ایک شکایت درج کی ،جس میں بتایا گیا کہ نیشنل کانفرنس کے ایک سرگرم کارکُن مدثر حسین آہنگر نے سوشل میڈیا پر ایک جھوٹی ور من گھڑت وٹس ایپ خبر شائع کی ،جو حقیقت سے بعید ہے۔شکایت پر پولیس نے مبینہ ملزم کو پولیس اسٹیشن بلایااور باہمی سوجھ بوجھ سے غلط فہمی کو دور کیا گیا۔شکایت کنندہ کا فوٹو اور نام وٹس ایپ پر شئیر کیا گیا ،جس میں شکایت کنندہ کو بی جے پی کا ایک کارکن قرار دیا گیا۔شکایت کنندہ نے تحری شکایت درج کی لیکن بعد میں افہام و تفیہم سے معاملہ حل کیا او رمعاملہ کی مزید تحقیقات سے کنارہ کشی کی ۔
 

 بھرچرن گاؤں میں25 رہائشی مکانات کو شدید خطرہ

شدید بارشوں اوربرفباری سے پسیاں کھسکنے کا عمل جاری ، مکینوں کی ہجرت 

ڈوڈہ//ضلع ڈوڈہ کے کاستی گڑھ علاقہ کی پنچائت کڈھار کے گاؤں بھرچرن گاؤں میں شدید بارشوں اوربرفباری سے پسیاں چٹانیں گرنے سے پچیس رہائشی مکانات شدید خطرے میں ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اس گاؤں میں گزشتہ تین برسوں سے اس طرح کا خطرہ پایا جارہاہے اور رواں برس بارشوں اوربرفباری کے بعد گزشتہ تین یوم سے پسیاں گرنے کا سلسلہ شروع ہواہے اوراس کی زد میں پچیس رہائشی آنے کے بعد ان مکانوں کے مکینوں نے ہجرت کرلی ہے ۔ اطلاعات یہ بھی ہے کہ ہجرت کرنے والے لوگوں نے کھیتوں میں پناہ لی ہے اس سلسلہ میں نائب تحصیلدار کاستی گڑھ نے بھی موقع  پر جائزہ لے کرپسیاں گرنے سے کنبوں کی ہجرت کی تصدیق کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ابھی بھی وہ خطرہ ہے ۔ علاقے کے لوگوں نے متاثرہ کنبوں کو امداد کا مطالبہ کیا ہے۔
 
 

گول سکول میں فرنیچر او ر اسٹیشنری فراہم

رام بن / / ضلع کے دور افتادہ علاقہ کے سرکاری سکولوں میں انفراسٹریکچر کی بہتری کیلئے انڈین آرمی نے گورنمنٹ ہائر سیکنڈری سکول گول کو فرنیچر اور اسٹیشنری اشیاء فراہم کئے،جس کا مقصد دور افتادہ علاقوں کے طلاب کو سکول جانے کے لئے زیادہ سے زیادہ حوصلہ افزائی کرنا تھا۔ سرکاری سکولوں میںانفراسٹریکچر کی بہتری سے نوجوانوں میں پڑھائی کے تئیں شوق بڑھ جاتا ہے جس کی وجہ سے وہ سکولوں کا رُخ کرتے ہیں۔مقامی لوگوں نے فوج کی جانب سے دور افتادہ علاقہ میں اسٹیشنری اور فرنیچر مہیا کرنے کی کافی سراہناکی ہے اور کہا ہے کہ اس سے یقینی طور سکولوںمیں انفراسٹریکچر بہتر ہوگا ،جس کا براہ راست طلاب کو فائدہ ہوگا۔ موضع گول کے سرپنچ نے بھی فوج کا شکریہ ادا کیا۔
 
    

نجی سکول کے یوم قیام پر ثقا فتی پروگرام کا اہتمام

رام بن // ضلع کے ایک نجی سکول ائراانٹرنیشنل کانونٹ سکول (EICS), ،چندر کوٹ میں یوم قیام کے موقعہ پر محکمہ اطلاعات رام بن کے اشتراک سے متعدد ثقافتی اور معلوماتی پروگرام منعقد کئے گئے۔اس موقعہ پر ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر مہمان خصوصی تھے جبکہ زیڈ ای او بٹوت مہمان ذی وقار تھے۔پروگرام میں سٹاف ممبران ،والدین اور طلاب نے بھی شرکت کی۔ اس موقعہ پر اپنے خطاب میں مہمان خصوصی نے معیار ی تعلیم پر سکول منیجمنٹ کی توجہ مرکوز کرنے پر ستائش کی اور طلاب میں اخلاقی اقدار پیدا کرنے پر زور دیا ۔اسکے علاوہ سپورٹس او رغیر نصابی کاروائیاں جیسے کہ رنگا رنگ ثقافتی پروگرام بشمول کشمیری، ڈوگری ،پنجابی اور پہاڑی رقص بھی پیش کیا گیا، جس سے سامعین محظوظ ہوئے ۔اپنے خطاب میں زیڈ ای او اور پرنسپل نے طلاب کو شاندار اکیڈمک ریکارڈ بنانے پر مبارک باد دی ۔دریں اثنا ، اساتذہ کو مثالی کار کردگی کا مظاہرہ کرنے پر عزت افزائی کی گئی۔پروگرام کے اختتام پر اسکول کی پرنسپل مہنازہ رشید نے شکریہ کا ووٹ پیش کیا۔
 
 

مویشی سمگلر گرفتار، 6 مویشی بازیاب 

ایم ایم پرویز 
رام بن //رام بن پولیس نے ایک مشتبہ مویشی سمگلر کو گرفتار کرنے اور  6 مویشی بازیاب کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ پولیس بیان کے مطابق پولیس نے پولیس چیک پوسٹ رام بن پر معمول کی چیکنگ کے دوران ایک شخض کو پیدل چل کر 6مویشی  کشمیر کی طرف لیجاتے ہوئے دیکھا ۔جس پر پولیس نے اسے روکا  اور اسکی تحقیقات کی ،جو پر مذکورہ شخض مویشی لیجانے کیلئے جائز حکام کی اجازت پیش کرنے میں ناکام رہا ۔پولیس نے تمام مویشیوں کو بازیاب کیا اور مشتبہ مویشی سمگلر کو گرفتار کیا ،جسکی پہچان غلام حسن ، ولد عبدل ستار ساکن کسکوٹ ،بانہال کے بطور بیان کی گئی ہے۔ پولیس نے اس سلسلہ میں ایک معاملہ زیر ایف آئی آر نمبر  51 of 2019 درج کرکے مزید کاروائی شروع کی ہے۔
 

کی جانب سے کھلینی میں طبی کیمپ کاانعقادSSB

ڈوڈہ//شستر سیما بل بٹالین کھلینی کی طر ف سے علاقہ کے غریب عوام کو مفت طبی جانچ اور دویات فراہم کرنے کے لئے طبی کیمپ کاانعقاد کیا۔ یہ طبی کیمپ ڈی ، آئی ، جی ایس۔ ایس ۔بی جموں منوندرانیگی کی سربراہی میں منعقد ہوا۔ اس موقع پر ضلع ترقیاتی کمشنر ڈوڈہ ، کمانڈنٹ اجے کمار ، اوپریشن ایس ، پی رویندرپال سنگھ ، سی ، آر پی ایف کے افسران بھی موجود تھے ۔ ضلع ہسپتال ڈوڈہ کے سپرانٹنڈنٹ پرویز احمد کے علاوہ ٹروماہسپتال میں تعینات ڈاکٹر فہیم وانی نے ڈھائی سو سے زائد لوگوں کا طبی معائینہ کیا اورایس ایس بی کی طرف سے ان کو مفت دوائیاں فراہم کی گئی ۔ اس موقع پر ڈی ، آئی ، جی نے بتایا کہ فورس عوام کے درمیان رہ کران کی خدمت کرنا چاہتی ہے ڈوڈہ علاقہ دور ہونے کی وجہ سے یہاں طبی سہولیت کافقدان ہے اس لئے دیہی علاقوں میںعوام کو گھر کی دہلیز پر طبی سہولیات فراہم کرنے کے لئے ایس ایس بی کی طرف سے طبی کیمپ کاانعقاد کیا گیا ۔ اور آئندہ بھی دیہی علاقوں میں غریب لوگوں کے لئے بھی کیمپوں کا انعقاد کرے گی۔
 
 

ڈی سی ڈوڈکا چنگا میں عوامی دربار کا انعقاد 

ڈوڈہ//ضلع ترقیاتی کمشنر ڈوڈہ ڈاکٹر ڈائفوڈ ساگر کی صدارت میں بھلیسہ سب ڈویژن کے کمیونٹی حال چنگا میں عوامی دربار کا انعقاد کیا ، اس موقع پر بھاری تعداد میں عوام ، سیاسی کارکنوں وپنچایتی نمائندگان نے حصہ لیا اور حالیہ برف باری وبارشوں سے ہوئے نقصانات کے بارے میں جانکاری دی، مقررین نے تعلیمی اداروں وہسپتالوں میں عملہ وبنیادی ڈھانچہ کی کمی ، رابطہ سڑکوں کی خستہ حالی، پانی وبجلی کی نایابی ، گورنمنٹ ڈگری کالج کلہوتران میں بنیادی ڈھانچے وتدریسی عملہ کی قلت وغیرہ شامل ہیں، ضلع ترقیاتی کمشنر ڈوڈہ نے انتظامیہ کو ہدایت دی کہ ترجیحی بنیادوں پر عوامی مشکلات کا ازالہ کیاجائے
 

ہندو شو سینا کا ہسپتال اور ڈی سی کمپلیکس میں سیکورٹی کا مطالبہ 

کشتواڑ// ہندو شو سینا نے ضلع ہسپتال اور ضلع آفس کمپلیکس میں سیکورٹی کا مطالبہ کرتے ہوئے ریاست کے گورنر سے حال ہی میں رونما ہوئے معاملہ میں مداخلت کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ایک پریس بیان میںکشتواڑ کے ایچ ایس ایس انچارج تلک راج شان نے ضلع بھر میں تمام اداروں کیلئے سیکورٹی کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ گذشتہ روز ضلع اسپتال کے احاطہ سے کئی نو زائید بچوں کی نعشیں برآمد کی گئی تھیں،جو کوڑے دانوں اور پتھروں کے نیچے دفن کی گئی تھی۔شان نے الزام لگایا ہے کہ ضلع اسپتال میں مناسب سیکورٹی نہ ہونے کی وجہ سے ایسے واقعات باقاعدگی سے رونما ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسپتال میں کوئی چیک پوائنٹ نہیں ہے جسکی و جہ سے وہاں کوئی بھی گھوم سکتا ہے ،جو امن کے لئے خطرہ ہے۔انہوں نے مزید کہا ہے کہ ضلع ایڈمنسٹریٹو کمپلیکس میں بھی سیکورٹی کا فقدان ہے  اور نہ تو اسپتال کی دیوار بندی ہے جسکی وجہ سے یہ احاطہ پارکنگ گرائونڈ میں تبدیل ہوگیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حال ہی میں پریہا ربھائیوں کی ہلاکت اور پی ایس او سے رائفل چھیننے کا واقعہ بھی سیکورٹی کی کمی کی وجہ سے رونما ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ قصبہ میںلوگ سیکورٹی کے فقدان کی وجہ سے خوف زدہ ہیں اور کہا کہ قصبہ میں سی سی ٹی وی نصب کرنے کی ضرورت ہے،تاکہ جرائم پر قابو پایا جا سکے۔
 

تازہ ترین