سب سنٹر ناڑ بالاکوٹ 2011سے زیر تعمیر

۔32لاکھ روپے سے زائد رقم خرچ کرنے کے باوجود عمارت مکمل نہ ہو سکی

15 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

جاوید اقبال
 
مینڈھر//بالاکوٹ بلاک کی ناڑ پنچائت میں 8برسوں سے ایک ہیلتھ سب سنٹر زیر تعمیر ہے تاہم متعلقہ محکمہ کی لاپرواہی کی وجہ سے مذکورہ عمارت کو ابھی تک مکمل نہیں کیاجاسکا جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہو ئے کہاکہ عمارت مکمل نہ ہونے کی وجہ سے محکمہ ہیلتھ کی جانب سے علا قہ میں اپنا ہسپتال ایک کرائے کے کمرے میں رکھا ہو ا ہے ۔انہوں نے کہا کہ علاقہ میں محکمہ صحت کے غیر معیاری نظام کی وجہ سے مقامی لوگوں کو کسی بھی مشکل وقت میں کئی کلو میٹر مسافت طے کر کے راجوری یا سرنکوٹ علاج معالجہ کیلئے جا نا پڑتا ہے ۔اس ہسپتال کی تعمیر 2011میں شروع کی گئی تھی جبکہ ابھی تک اس عمارت پر مجموعی طور پر 32لاکھ روپے سے زائد رقم خرچ ہو نے کا تخمینہ ہے تاہم عمارت کو پوری طرح سے مکمل نہیں کیا جا سکا ہے ۔پنچایت ناڑ کے یوتھ لیڈر احسان اکرم نے کہا کہ آٹھ برس قبل مقامی لوگوں کوسہولیات دستیاب کرنے کیلئے علا قہ میں ایک سب سنٹر کا کام شروع کیا گیا تھا لیکن متعلقہ محکمہ کی عدم توجہی کی وجہ سے ابھی تک اس عمارت کو محکمہ صحت کے حوالے نہیں کیا جاسکا ہے جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو کئی طرح کے مسائل کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔ان کا کہنا تھا کہ32 لاکھ روپے سے بھی زائد رقم سب سنٹر کی عمارت پر خرچ کی جا چکی ہے لیکن عمارت ابھی تک متعلقہ محکمہ کے سپرد نہیں کی گئی ہے اور ایک بڑی آبادی والی پنچائت کے لوگ ہسپتال نہ ہونے کی وجہ سے کئی قسم کی پریشانیوں میں مبتلا ہیں جبکہ متعلقہ محکمہ بھی ہسپتال کی عمارت جلد مکمل کرنے میں دلچسپی نہیں لے رہا ہے۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ پونچھ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ عمارت کو جلد از جلد مکمل کیا جائے تاکہ عوام کو سہولیات میسر ہو سکیں ۔ بلاک میڈیکل آفیسر مینڈھر ڈاکٹر پرویز احمد خان کا کہنا تھا کہ 2011میں محکمہ تعمیرات عامہ نے عمارت کا کام شروع کروایا تھا جو ابھی تک مکمل نہیں ہو۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں متعدد بار متعلقہ محکمہ سے رجوع کیا گیاتاکہ مذکورہ عمارت کو مکمل کر کے سٹاف کو سنٹر میں تعینات کیا جائے ۔

تازہ ترین