امام بارگاہ سلواہ بنولہ میں یوم حسین ؑ کی تقریب

15 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

حسین محتشم
 
پونچھ//امام بارگاہ سلواہ بنولہ میں انجمن حسینی کے زیر اہتمام یوم حسین ؑ کے عنوان سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا، جس میں کشمیر کے راجوری اور پونچھ اضلاع سے عاشقان محمد و آل محمد ﷺ نے شرکت کی۔دوران محفل مقامی شعرائے کرام اور دیگر ثناخواں نے منقبت ، سلام و نوحہ کا نذرانہ پیش کیا۔ اس موقعہ پر خصوصی خطاب میں  عالمی شہرت یافتہ خطیب مولانا شیخ غلام رسول نوری نے کہا کہ اللہ نے ہمیں سب سے بڑی نعمت حیات دی  ہے۔انہوں نے کہا یہ عظیم نعمت اللہ نے عطا کی ہے اور وہی اللہ قرآن میں کہہ رہا ہے کہ’’ دوڑ کر جائونبیؐ کے پاس وہ تمہیں زندگی دے گا‘‘ انہوں نے کہا ہے کہ حسینؑ کو پہچاننے کے لئے مقام محمدی ؐ کو پہچاننا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک دفعہ کاذکر ہے کہ ایک اصحاب رسول نماز پڑھ رہے تھے کہ رسول اکرمؐ نے انھیں آواز دی تو صحابی نے نماز ختم کی اور نبی کے پاس پہنچے لیکن نبی نے کہا کہ اْبید میں نے تو تمھیں بہت پہلے پکارا تھا تو اصھاب رسول اُبید نے جواب میں کہا حضور ؐ میں نماز پڑھ رہاتھا تونبیؐ نے کہا کہ میں دیکھ رہا تھا تم نماز پڑھ رہے ہو لیکن کیا تم نے قرآن کی وہ آیت نہیں پڑھی جس میں اللہ فرماتا ہے ’’دوڑ کر جائو نبیؐ کے پاس وہ تمہیں زندگی دے گا۔ انہوں نے کہا کہ رسول نے ہی ہمیں نماز سکھائی  اگر دوسرا کوئی نماز کے دوران پکارتا تو نماز توڑانا جائز نہیں تھا لیکن جب خدا کا رسول ؐ پکارے تو نماز کو ترک کر کے ان کی بات سننا ضروری تھا انہوں نے کہا کہ یہی رسول امام حسین ؑ کو اپنی زندگی کے دوران کئی بار پہچنوا چکے تھے لیکن مسلمان ان کا ساتھ دینے کے بجائے ان کے خلاف ہوئے۔انہوں نے کہا کہ امام حسین علیہ السلام کے در پر ہمیشہ یہی پیغام دیا جاتا ہے کہ انسان پہلے خود کو پہچانے۔ انہوں نے کہا کہ نبی کریم ﷺنے جو محنت دین اسلام کے لئے کی، اس کو امام حسین علیہ السلام نے ابدی حیات بخشی۔ انہوں نے کہا کہ کہ یہ افتخار صرف حسین علیہ السلام کو حاصل ہے جنہوں نے نماز کو قائم کیا۔انہوں نے تمام دنیا میں امن و امان کی دعا طلب کی۔مولانا کے خطاب کے بعد صدر انجمن حسینی سلواہ بنولہ مولانا سید صفدرحسین نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا جبکہ محفل کے دوران نظامت کے فرائض ڈاکٹر شبیر عنوان نے انجام دیئے۔
 

تازہ ترین