تازہ ترین

کے کے شرما نے جموں میں بجلی منظر نامے اور پینے کے پانی کے منظرنامے کا جائزہ لیا

4 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

 جموں //گورنر کے مشیر کے کے شرما نے آج محکمہ بجلی کو ہدایت دی کہ وہ جموں خطے سے تعلق رکھنے والے صارفین کو بجلی کی معقول فراہمی یقینی بنائیں ۔ مشیر موصوف نے ان باتوں کا اظہار جموں صوبے کے پاور سیکٹر کی ایک جائیزہ میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ جموں میں موجودہ موسمِ گرما کے دوران بجلی کی کمی سے لوگوں کی مشکلات دور کرنے کیلئے مشیر موصوف نے پاور ڈیولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کو ہدایت دی کہ وہ بجلی کی کٹوتی کے شیڈول پر سختی سے عمل کرتے ہوئے لوگوں کو معقول بجلی کی دستیابی یقینی بنائیں ۔ میٹنگ کے دوران مشیر موصوف کو بتایا گیا کہ پورے جموں خطے میں خراب شدہ ٹرانسفارمروں کی جگہ نئے ٹرانسفارمر لگانے کے سلسلے میں ٹرانسفارمروں کی ایک بڑی تعداد معرض وجود میں لائی گئی ہے ۔ مشیر موصوف نے کہا کہ حکومت لوگوں کو 24 گھنٹے بجلی فراہم کرنے کی وعدہ بند ہے اور اس سلسلے میں محکمہ بجلی کی طرف سے بجلی کے بنیادی ڈھانچے کو مضبوطی اور استحکام بخشنے کیلئے تیز تر بنیادوں پر کام جاری ہے ۔ متعلقہ ایگزیکٹو انجینئروں کو ہدایت دی گئی کہ وہ غیر قانونی طور پر بجلی کا استعمال کرنے والے افراد کے خلاف سخت اقدامات کریں ۔ مشیر موصوف نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ محکمہ بجلی کے ریونیو کے اہداف مکمل کرنے کیلئے ضروری نظام قایم کریں ۔ میٹنگ میں کمشنر سیکرٹری پاور ڈیولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ ہردیش کمار ، چیف انجینئر بجلی سدھیر گپتا ، چیف انجینئر آبپاشی و فلڈ کنٹرول ونود گپتا ، چیف انجینئر ایس اینڈ او ونگ گرمیت سنگھ ، ڈیولپمنٹ کمشنر پاور اویناش دوبے و دیگر اعلیٰ افسران موجود تھے ۔ دریں اثنا ،گورنر کے مشیر کے کے شرما نے پی ایچ ای محکمہ کو ہدایت دی ہے کہ وہ جموںمیں خاص طور سے گرمی کے ایام کے دوران لوگوں کو پینے کے پانی کی بہتر سہولیات فراہم کرنے کے لئے مؤثر لائحہ عمل اختیار کریں۔مشیر نے اِن باتوں کا اِظہار آج یہاں اعلیٰ سطحی کی ایک جائزہ میٹنگ کے دوران کیا۔میٹنگ میں کمشنر سیکرٹری پی ڈی ڈی ہردیش کمار ، چیف انجینئر پی ڈی ڈی سدھیر گپتا ، چیف انجینئر پی ایچ ای ونود گپتا اور کئی دیگر افسران بھی موجو دتھے۔مشیر نے پی ایچ ای اور آبپاشی محکموں کے کام کاج کا تفصیلی جائزہ لیا او رکہا کہ لوگوں کے مسائل کو حل کرنے کے لئے مؤثر اقدامات کئے جانے چاہئیں ۔اُنہوں نے کہاکہ لوگوں کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جانا چاہیئے اور ضرورت پڑنے پر اضافی ٹینکروں کو کام پر لگایا جانا چاہیئے ۔ غیر قانونی پانی کنکشنوں پر تشویش کا اِظہار کرتے ہوئے مشیر نے کہاکہ پانی کے نظام میں معقولیت لانے کے لئے اس غیر قانونی عمل پر روک لگائی جانی چاہئے ۔مشیر موصوف نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ پانی کو منصفانہ طریقے پر استعمال کریں اور وقت پر اپنی بلیں ادا کریں۔ میٹنگ میں ٹیوب ویلوں میں موجود تباہ ہوئے ٹرانسفارمروں کی مرمت سے جُڑے امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔مشیر نے کہا کہ پی ایچ ای اور پی ڈی ڈی محکموں کو آپسی تال میل کے ساتھ کام کرنا چاہیئے تاکہ لوگوں کی راحت رسانی ہوسکے ۔اُنہوں نے اِلتوأ میں پڑے کئی پروجیکٹوں اور سکیموں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ انہیں جانکاری دی گئی کہ جموں ، پونچھ اور کٹھوعہ ضلعوںمیں 20پروجیکٹ مکمل کئے جاچکے ہیں جبکہ جموں ضلع میں مزید 25سکیموں پر شدو مد سے کام جاری ہے جنہیں اگلے چند مہینوں کے دوران مکمل کیا جائے گا۔شری امرناتھ جی یاترا کا ذکرکرتے ہوئے مشیر موصوف نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ یاترا کے مختلف پڑائوں پر پینے کے پانی کی سہولیات قائم کریں۔