تازہ ترین

نواز شریف کی زندگی خطرے میں ہے: ڈاکٹر عدنان

5 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

طاسلام آباد //سابق وزیر اعظم نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان خان نے جیل میں ملاقات کے بعد کہا ہے کہ ان کی زندگی خطرے میں ہے اور یہ ایک وارننگ ہے جبکہ مریم نواز نے والد سے ملاقات کی اجازت نہ دینے پر حکومت کو تنقید نشانہ بنایا۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر میں اپنے پیغام میں کہا کہ ‘سابق وزیر اعظم نواز شریف سے جیل میں ملاقات کی اور معائنہ کیا، انہیں گزشتہ روز صبح 4 بجے کے قریب تکلیف ہوئی اور سانس لینے میں دشواری پیش آئی۔ان کا کہنا تھا کہ ‘جب انہیں سانس لینے میں زیادہ مشکل پیش آئی تو گارڈ سے سیل کا دروازہ کھولنے کی درخواست کی اور انہیں بحالی میں اسپرے کے بعد کچھ وقت لگا’۔ڈاکٹر عدنان نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ‘ان کی زندگی کو خطرہ ہے اور یہ ایک وارننگ ہے’۔نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے ڈاکٹر عدنان کے ٹویٹ کے جواب میں کہا ہے حکومت انہیں اپنے والد سے ملنے کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ ‘جعلی و سیاسی مقدموں میں قید نواز شریف کی صحت کو خطرہ لاحق ہے ایسے میں جو بیٹی کو ملنے کی اجازت نا دیں ان سے بڑا ظالم کون ہو گا’۔انہوں نے کہا کہ ‘ظلم، نفرت اور انتقام کی غلیظ سیاست کرنے والوں کو نہیں بھولنا چاہیے کہ اللہ دنوں کو الٹتا پھیرتا رہتا ہے اور ہمیشہ کی بادشاہی اسی کی ہے’۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگ زیب نے مریم نواز کو اپنے والد ملاقات کی اجازت نہ دینے کی مذمت کرتے ہوئے اپنے بیان میں کہا کہ ‘میاں صاحب کی صحت سے متعلق تشویش ناک خبریں مل رہی ہیں، مریم نواز ہر روز پنجاب حکومت سے اپنے والد سے ملنے کی اجازت مانگ رہی ہیں اور پنجاب حکومت عمران صاحب کو خوش کرنے کے لیے اجازت نہیں دے رہی ہے’۔ان کا کہنا تھا کہ ‘نواز شریف کو عید کے موقع پر بھی اپنی والدہ، بیٹی اور گھر والوں سے ملنے نہیں دیا جا رہا، نوازشریف سے ملاقات کا دن جمعرات مختص کیا گیا ہے لیکن اْس دن بھی ملنے کی اجازت نہیں دی جا رہی’۔