تازہ ترین

کاروانِ حرم

7 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

سُن کے بانگِ درا، جھوم اُٹھّی صبا، سوئے منزل چلا، کاروانِ حرم
دھیمے دھیمے سے تکبیر کے ساز پر، وقت نے چھیڑ دی داستانِ حرم
 
چشمِ احباب سے، اشک بہنے لگے، پھر اشاروں میں حسرت سے کہنے لگے 
طَوفِ بَیتِ خُدا، دیدِ قبرِ نبی، ہو مُبارک تمھیں زائرانِ حرم
 
شہر کی رونقوں میں بڑھی دلکشی، راہ کی گرد اُڑ اُڑ کے کہنے لگی 
مرحبا مرحبا آفریں آفریں، آگئے آگئے میہمانِ حرم
 
 
یا تو یہ رب کی تسبیح و تہلیل ہے، یا صدا ئے مُناجاتِ جبریل ہے 
دل کی آواز پر، عشق کے ساز پر، چہچہانے لگے طائرانِ حرم
 
اب کہیں پہ موافق زمانہ نہیں، ہے کڑی دھوپ کوئی ٹھکانا نہیں 
کاش سایہ رہے سب پہ چھایا رہے، بن کے رحمت نشاں سائبانِ حرم
 
ڈاکٹر سید شیبیب رضوی
اندرون کاٹھی دروازہ ، سرینگر،موبائل نمبر؛7780937020