تازہ ترین

میرواعظ کی خانہ نظر بندی حریت کی مذمت

13 جولائی 2019 (22 : 02 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر//حریت (ع)اور عوامی مجلس عمل نے میرواعظ ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق کو ایک بار پھر اپنی رہائش گاہ  میرواعظ منزل نگین میں نظر بند کرکے انکی پر امن سیاسی و دینی سرگرمیوں پر طاقت کے بل پر قدغن عائد کرنے  اور مسلمانان کشمیر کی عظیم دینی و روحانی عبادتگاہ مرکزی جامع مسجد سرینگر کو ایک بار پھربندشوں کے دائرے میں لاکر وہاں  نماز جمعہ کی ادائیگی پر پابندی عائد کئے جانے اور شہر خاص کے بیشتر حصوں کو پابندیوں اور بندشوں کی زد میں لانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے حکمرانوں کا جارحانہ اقدام قرار دیا ہے ۔بیان میں کہاگیا کہ میر واعظ کو اپنی رہائش گاہ میں نظر بند کرکے ان کی پر امن سرگرمیوں پر جس طرح پابندی عائد کردی وہ انتہائی مذموم، غیر جمہوری، غیر اخلاقی اور اظہار رائے کی آزادی کا گلہ گھونٹنے کے مترادف ہے ۔