تازہ ترین

منشیات فروشوں کیخلاف اعلان جنگ | ہندوارہ کے بعد سرینگر میں بھی پولیس کانسٹیبل گرفتار

بجبہاڑہ سے میاں بیوی بھی دھر لئے گئے، آرونی میں 4ہزار نشیلی ادویات کی بوتلیں برآمد

20 جولائی 2019 (57 : 10 PM)   
(      )

اشفاق سعید
سرینگر // ہندوارہ میں منشیات کے دھندے میں ملوث پولیس اہلکار کی گرفتاری کے بعد پولیس کنٹرول روم سرینگر کے نزدیک بھی پولیس کے ایک ہیڈ کانسٹیبل کو منشیات سمیت گرفتار کر لیا گیا ہے۔ادھر اننت ناگ میں منشیات کے کاروبار میں ملوث میاں بیوی کو پولیس نے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ہے۔ پولیس حکام نے اس بات کا اعلان کیا ہے کہ منشیات فروشوں کو کوئی معافی نہیں دی جائے گی۔چوگل ہندوارہ میں ہندوارہ پولیس نے 13جولائی کو چیکنگ کے دوران مشتاق احمد ولد عبدالاحد ساکن کلمونہ رامحال نامی پولیس اہلکار کو اس وقت گرفتار کیا جب اسکی تلاشی لی گئی اور 750گرام ہیروئن بر آمد کی گئی۔مذکورہ پولیس کانسٹیبل ہندوارہ م پولیس بم ڈسپوزل سکارڈ کیساتھ وابستہ تھا۔ منشیات فروشی میںپولیس اہلکار کے ملوث ہونے سے پوری وادی میں سراسمیگی پھیل گئی۔ سنیچر کوسرینگر پولیس نے مصدقہ اطلاع ملنے پر اسی طرح کی کارروائی میں بٹہ مالو علاقے سے ایک پولیس ہیڈ کانسٹیبل الطاف احمد راتھر ولد محمد اکبر راتھر ساکن پانزن چاڑورہ کو اُس وقت گرفتار کیا جب وہ منشیات کی ترسیل کرنے کی کوشش میں تھا۔اسے معطل کردیا گیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں خفیہ طور پر اطلاع ملی تھی کہ مذکورہ پولیس اہلکار منشیات کے کاروبار میں ملوث ہے اور 17جولائی کو اس بات میں معلومات موصول ہوئیں۔ اسکے بعد ایس ایچ او بٹہ مالو سبزار احمد کی سربراہی میں پولیس کنٹرول روم اور بٹہ مالو علاقے میں کئی مقامات پر ناکے لگائے گئے اور اس دوران مذکورہ پولیس کانسٹیبل کو گاہکوں کو ڈھونڈتے ہوئے پایا گیا اور کنٹرول روم کے قریب اسے دبوچ لیا گیا۔اسکے قبضے سے 650گرام چرس بر آمدکی گئی۔اسکے علاوہ اسکی تحویل سے 19150روپے بھی بر آمد کئے گئے جو اس نے چرس فروخت کر کے کمائے تھے۔مذکورہ پولیس ہیڈ کانسٹیبل کی موٹر سائیکل زیر نمبر JK01S/2152 بھی ضبط کی گئی اور اسکے خلاف کیس زیر نمبر64/2019زیر دفعات8/20این ڈی پی ایس رجسٹر کیا گیا۔ادھراننت ناگ پولیس نے مصدقہ اطلاع پر آرونی کراسنگ کے نزدیک میاں بیوی کو بھاری مقدار میں چرس سمیت گرفتار کیا ۔پولیس کی ناکہ پارٹی نے آرونی بجہباڑہ کراسنگ کے نزدیک فاروق احمد بٹ و اسکی اہلیہ مسماۃ حسینہ ساکن  حیدر کالونی سوپور کو روک کر انکی تحویل سے چرس کی بھاری مقدار ضبط کی ۔پولیس نے اس سلسلے میں پولیس اسٹیشن بجہباڑہ میں کیس 104/19 u/s8/20 این ڈی پی ایس ایکٹ درج کرکے جوڑے کو سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ۔دریں اثناء پولیس نے لوکٹی پورہ آرونی بجبہاڑہ میں ایس ایچ او بجبہاڑہ کی سربراہی میں تشکیل دی گئی ایک پولیس ٹیم کی مدد سے نشیلی ادویات کی چار ہزار بوتلیں ضبط کرلیں۔ ایس ایچ او بجبہاڑہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ لوکٹی پورہ گائوں میں جہلم کے کنارے جھاڑیوں کے بیچ 31پیٹیاں رکھی گئیں تھیں جن کے بارے میں ولیس کو اطلاع ملی اور اس نے وہاں چھاپہ ڈالا جس کے دوران پیٹیوں میں بھری چار ہزار کوڈین نامی نشہ آور ادویات کی بوتلیں ضبط کی گئیں۔ اس سلسلے میں کیس زیر نمبر105درج کرلیا گیا ہے اور نشیلی ادیوات کی چار ہزار بوتلوں کی ترسیل کرنے میں ملوث منشیات فروش کی نشاندہی کرلی گئی ہے اور اُس کو گرفتار کرنے کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیںَ۔