تازہ ترین

سرینگر کا کم سے کم درجہ حرارت منفی5.7ڈگری سیلشیس ریکارڈ

سرینگر /وادی کشمیر میں ایک بار پھر شدت کی سردی محسوس کی جارہی ہے جبکہ سنیچر کی صبح وادی بھر کی سڑکیں منجمد تھیں جس کے نتیجے میں گاڑیوں کی نقل و حمل میں بے حد مشکلات پیش آئیں۔ محکمہ موسمیات کے مطابق شہر سرینگر میں گذشتہ شب کم سے کم درجہ حرارت منفی5.7ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیا ۔ گلمرگ میں محکمہ موسمیات کے مطابق کم سے کم درجہ حرارت منفی14.4ڈگری سیلشیس جبکہ گلمرگ میں یہ منفی12.7ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیا۔ ماہرین کے مطابق رات کے درجہ حرارت میں اتنی کمی آسمان صاف رہنے کا نتیجہ ہے۔  

لبریشن فرنٹ کے تین لیڈران سرینگر میں گرفتار

سرینگر /جموں  کشمیرلبریشن فرنٹ نے سنیچر کو کہا کہ اُس کے تین لیڈران کوپولیس نے سرینگر میں  اُن کے گھروں سے حراست میں لے لیا۔ پارٹی کے ترجمان نے کہا کہ نور محمد کلوال، شوکت بخشی اور محمد سلیم ننا جی کو پولیس نے باالترتیب سرینگر کے الٰہی باغ،بمنہ اور نٹی پورہ علاقوں سے حراست میں لیا۔ ترجمان کے مطابق گرفتار شدگان کو محمد افضل گورو کی برسی کے موقع پر آج ایک احتجاجی مظاہرے کی قیادت کرنی تھی۔ واضح رہے کہ وادی کشمیر میں آج گورو کی چھٹی برسی کے سلسلے میں ہرٹال ہے۔  

ٹنل تودہ: ملبے سے پولیس اہلکار کی لاش بر آمد، اموات کی تعداد8

سرینگر/تلاشی اوربچائو عملے نے سنیچر کو سرینگر ۔جموں شاہراہ پر جواہر ٹنل کے نزدیک ،جہاں گذشتہ روز برفبانی تودے نے پوری پولیس پوسٹ کو اپنی زد میں لایا تھا، ملبے سے ایک پولیس اہلکار کی لاش بر آمد کی۔ کانسٹیبل پرویز احمد کی لاش بر آمد ہونے کے بعد اس تودے کے نتیجے میں مرنے والوں کی تعداد8ہوگئی ہے۔ دس افراد گذشتہ روز تودہ گر آنے کے بعد لاپتہ ہوئے تھے جن میں سے دو کو زندہ نکالا گیا جبکہ آٹھ کو مردہ حالت میں نکالا گیا۔ سات لاشیں گذشتہ روز ہی نکالی گئی تھیں۔ حالیہ برفباری کے نتیجے میں اب تک کئی افراد جاں بحق ہوگئے ہیں۔ جواہر ٹنل کے بعد رامسو علاقے میں بھی دو افراد پسی گر آنے کی وجہ سے لقمہ اجل ہوگئے ۔ اننت ناگ ضلع میں بھی کل ہی دو افراد تودے کی زد میں آکر جاں بحق ہوگئے۔ سوپور میں آج ایک بچہ مکان سے گرنے والی برف کی زد میں آکر جاں بحق ہوگیا  

افضل گورو کی چھٹی برسی پر کشمیر میں ہڑتال سے معمولات ٹھپ

سرینگر/علیحدگی پسندوں کی اپیل پر سنیچر کو وادی کشمیر میں محمد افضل گورو کی چھٹی برسی کے موقع پر مکمل ہڑتال کی وجہ سے معمولات ٹھپ ہوکر رہ گئے ہیں۔ گورو کو پارلیمنٹ حملے میں ملوث قرار دینے کے بعد دلی کے تہار جیل میں2013میں آج ہی کے دن تختہ دار پر لٹکایا گیا تھا۔ گورو کو بعد میں جیل احاطے کے اندر ہی دفن کیا گیا تھا۔ سید علی گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل علیحدگی پسندوں کے وفاق مشترکہ مزاحمتی قیادت نے آج ہڑتال کی کال  دے رکھی ہے۔  لیڈران نے اپنی اپیل میں گورو کی باقیات قانونی ورثاء کو لوٹانے کی مانگ کی ہے۔ گورو کے گھر میں اُس کا بیٹا، غالب گورو اور اہلیہ تبسم گورو ہیں، جو تارزو سوپور میں رہتے ہیں۔ حکام نے میرواعظ کو خانہ نظر بند جبکہ ملک کو تھانہ نظر بند کر رکھا ہے جبکہ گیلانی کئی برس سے خانہ نظر بند ہیں۔ اطلاعات کے مطابق پوری و

کشمیر میں ٹرین سروس مسلسل تیسرے روز معطل

سرینگر/کشمیر میں سنیچر کو ٹرین سروس مسلسل تیسرے روز معطل رہی۔ ذرائع کے مطابق یہ سروس گذشتہ دو روز کے دوران بھاری برفباری کی وجہ سے بند رکھی گئی تھی جبکہ آج وادی میں ہڑتال کے پیش نظر اس کو معطل کردیا گیا ہے۔ ریلوے حکام کے مطابق اُنہیں گذشتہ رات دیر گئے ٹرین سروس حفاظتی اقدام کے تحت بند رکھنے کی ایڈوائزری مل گئی تھی۔  

سوپور میں مکان سے گرنے والی برف کی زد میں آنے والا بچہ لقمہ اجل

سرینگر/شمالی کشمیر کے سوپور علاقے میں ایک سات سالہ بچہ اُس وقت لقمہ اجل بن گیا جب وہ مکان کی چھت سے اچانک گرنے والی برف کی زد میں آگیا۔ یہ واقعہ سوپور کے چری ہار نامی گائوں میں گذشتہ شام کوپیش آیا۔ ذرائع کے مطابق عرفان احمد خان ولد غلام حسن خان بھاری برف کے نیچے آکر موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا ۔  خبر ساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق ایس ایس پی سوپور، جاوید اقبال نے اس واقعہ کی تصدیق کی۔  

کشمیر شاہراہ چوتھے روز بھی بند، اہل وادی کے مصائب جاری

سرینگر/سرینگر۔جموں شاہراہ سنیچر کوحالیہ برفباری کے بعد چوتھے روز بھی گاڑیوں کی نقل و حمل کیلئے بند ہے جس کے نتیجے میں اہل وادی کے مصائب و مشکلات لگاتار جاری ہیں۔ مذکورہ شاہراہ کوپانچ روز قبل یکطرفہ ٹریفک کیلئے کھولا گیا تھا تاہم شاہراہ پر برفباری اور پسیاں گر آنے کے بعد اس کو پھر بند کیا گیا۔ حکام کے مطابق شاہراہ کو ڈگڈول،پنتھال، بیٹری چشمہ اور انوکھی فالز علاقوں میں صاف کیا جارہا ہے جہاں پسیاں گر آنے سے شاہراہ ناقابل آمد ورفت ہے۔ حکام نے کہا کہ شاہراہ پر کم و بیش ایسی 2500مال بردار گاڑیاں بھی درماندہ ہیں جن میں وادی کیلئے ضروری اشیا ہیں۔ شاہراہ پرگذشتہ دو ہفتوں کے زیادہ عرصہ سے ٹریفک کی آوا جاہی میںرکاوٹیں درپیش ہیں جس کی وجہ سے وادی کشمیر میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں ہوشربا حد تک اضافہ ہوا ہے۔