تیز رفتار گاڑی نے اونتی پورہ میں شہری کی جان لی

سرینگر /پولیس نے سنیچر کو ایک بیان میں کہا کہ کشمیر شاہراہ پر ڈانگر پورہ اونتی پورہ کے نزدیک پیش آئے ٹریفک کے ایک حادثے میں ایک شخص کی موت واقع ہوئی ہے۔ بیان کے مطابق آج دو بجکر10منٹ پر ایک تیز رفتار سکارپیو گاڑی نے اونتی پورہ کے نزدیک 45سالہ شخص ولی محمد ساکنہ ڈانگر پورہ اونتی پورہ کو ٹکر ماری جس کے نتیجے میں وہ شدید طورپر زخمی ہوا، اور بعد میں اس کی موت واقع ہوئی۔  چنانچہ پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔ پولیس بیان کے مطابق ڈرائیور گاڑی سمیت فرار ہوا ہے جسے ڈھونڈ نکالنے کیلئے پولیس نے بڑے پیمانے پر کارروائی شروع کی ہے۔    

وادی کے تین اضلاع میں موبائیل انٹر نیت سروس بحال

سرینگر/حکام نے وادی کے تین اضلاع میں سنیچر کو کم سپیڈ والی موبائیل انٹر نیت سروس بحال کردی۔ ان اضلاع میں بڈگام،بارہمولہ اور گاندربل شامل ہیں جہاں حکام کے مطابق کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔ تاہم وادی کے باقی ماندہ اضلاع میں موبائیل انٹر نیٹ سروس لگاتار معطل ہے۔ موبائیل سروس جمعرات کی شام ترال کے ڈاڈہ سرہ علاقے میں جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کی فورسز کے ہاتھوں ہلاکت کے پس منظر میں معطل کی گئی تھی۔  

سمبل سانحہ کے ملزم کیخلاف چارج شیٹ پیشِ عدالت

سرینگر/پولیس نے سنیچر کو سمبل سانحہ کے ملزم کیخلاف بانڈی پورہ کے پرنسپل ضلع سیشن کورٹ میں چارج شیٹ داخل کرلیا۔ شمالی ضلع کے سمبل علاقے میں8مئی کو ایک تین سالہ معصوم بچی کی عصمت ریزی کا سانحہ پیش آیا تھا جس کیخلاف وادی بھر میں شدید رد عمل کا اظہار ہوا ۔ سرکاری ذرائع کے مطابق پولیس نے ملزم کیخلاف واقعہ پیش آنے کے 17دنوں کے ریکارڈ وقت میں چارج پیش کیا ہے۔  ملزم کیخلاف بچوں پر جنسی تشدد کے انسداد کے کیس میں دفعہ3,5,376اور342آر پی سی کے تحت کیس دائر کیا گیا ہے۔ سمبل سانحہ کیخلاف عوام کے ہر طبقے سے وابستہ افراد نے صدائے احتجاج بلند کی تھی جبکہ فورسز اور مظاہرین کے مابین جھڑپوں کے دوران پٹن علاقے میں ایک عام شہری کی جان بھی چلی گئی۔  

پنگلش ترال میں پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں مبینہ طور چار خواتین کی پٹائی

سرینگر/پولیس اہلکاروں نے سنیچر کو ترال کے پنگلش نامی گائوں میں چار خواتین کو مبینہ طور اُن کے گھر میں ماراپیٹا۔  عینی شاہدین کے مطابق آج بعد دوپہر پولیس کی ایک پارٹی علی محمد راتھر ساکنہ پمپوش کالونی پنگلش کے گھر میں داخل ہوئی اور وہاں موجود اُن کی اہلیہ،دختر اور دیگر دو خواتین کی مارپیٹ کی۔ یہ واقعہ اُس وقت پیش آیا جب جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کی ہلاکت کے پس منظر میں گائوں کی مسجد کے لائوڈ سپیکرسے مذہبی ترانے بجائے جارہے تھے۔ علی محمد نے الزام عاید کرتے ہوئے کہا'' میں گھر میں ہی تھا جب پولیس کی ایک پارٹی نے گھس کر میری اہلیہ اور دختر سمیت چار خواتین کی مار پیٹ کی۔میں نے اُنہیں روکنے کی کوشش کی لیکن اُنہوں نے ایک نہ سنی اور مجھے بھی مارا پیٹا''۔ مذکورہ چاروں خواتین کو سب ڈسٹرکٹ اسپتال ترال پہنچایا گیا ہے جہاں اُن کا علاج جاری ہے۔  

شمالی کشمیر کے پٹن میں فوجی اہلکار نے سروس رائفل سے گولی چلا کر خود کشی کی

سرینگر/شمالی کشمیر کے پٹن علاقے میں سنیچر کو ایک فوجی اہلکار نے اپنی ہی سروس رائفل سے گولی چلاکر خود کی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ یہ واقعہ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق ہامرے ،پٹن میں پیش آیا جہاں 22انجینئرنگ ریجمنٹ سے وابستہ ایک فوجی نے دوران ڈیوٹی صبح گیارہ بجے خود کو گولی ماردی۔ گولی چلنے کے فوراً بعد جب اُس کے دیگر فوجی ساتھی اُس کے قریب پہنچے تو اُس کو خون میں لت پت پاکر نزدیکی ملٹری اسپتال پہنچایا جہاں ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قرار دیا۔ مذکورہ فوجی اہلکار کی شناخت 22سالہ سپاہی بتینی تیرو پتی کے طور ہوئی ہے۔  

بارشوں سے پسیاں گر آنے کے بعدسرینگر۔جموں شاہراہ پرٹریفک معطل

سرینگر/سرینگر۔جموں شاہراہ پر کو سنیچر کے روزبھاری بارشوں کے نتیجے میں پسیاں گر آنے کے بعد ٹریفک کیلئے بند کیا گیا ہے۔ حکام کے مطابق مذکورہ شاہراہ پر رامبن ضلع میں کئی مقامات پر پسیاں گر آئی ہیں۔ حکام نے کہا کہ بیٹری چشمہ علاقے میں آج صبح ایک بھاری پسی گر آئی جس کو ہٹانے کا کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ دو روز سے کشمیر شاہراہ پر مسلسل بارشیں ہورہی ہیں۔ ڈی ایس پی نیشنل ہائی وے رامبن، سریش شرما کے مطابق پسیاں ہٹانے کا کام جاری ہے تاکہ ٹریفک کی بحالی عمل میں لائی جاسکے۔انہوں نے کہا کہ بحالی کے کام میں کچھ گھنٹے لگ سکتے ہیں۔ آج جموں سے سرینگر کی طرف گاڑیوں کو چلنے کی اجازت تھی۔  

کشمیر کے بعض حصوں میں دوسرے روز بھی کرفیو جیسی پابندیاں نافذ

سرینگر/کشمیر میں سنیچر کو مسلسل دوسرے بھی بعض علاقوں میں کرفیو کے تحت پابندیاں عاید رکھی گئی ہیں۔ یہ پابندیاں گذشتہ روز سے جاری ہیں۔ ان پابندیوں کا اطلاق جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کے فورسز کے ساتھ معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق ہونے کے بعد عمل میں لایا گیا ہے۔ انصار غزوة الہند کے چیف کمانڈر ذاکرموسیٰ کو فورسز نے جنوبی ضلع پلوامہ کے ڈاڈہ سرہ علاقے میں جمعرات شام دیر گئے جاں بحق کردیا۔ حکام نے کہا کہ سرینگر کے کچھ علاقوں، کولگام اور پلوامہ قصبہ جات میں لوگوں کی نقل وحمل پر پابندیاں عاید کی گئی ہیں۔ حکام نے آج مسلسل دوسرے روز بھی سبھی تعلمی ادارے بند رکھنے کا اعلان کر رکھا ہے ،جبکہ ٹرین سروس بھی معطل رکھی گئی ہے۔ سرینگر کے جن پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں کرفیو کا نفاذ عمل میں لایا گیا ہے اُن میں نوہٹہ،رعناواری،خانیار،صفاکدل اور ایم آر گنج شامل ہیں، جبکہ مائسمہ ا

ذاکر موسیٰ اورشہری کی ہلاکت کیخلاف ہڑتال سے کشمیر کے معمولات متاثر

سرینگر/کشمیر میں سنیچر کو جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کی فورسز کے ہاتھوں ہلاکت اور ضلع پلوامہ میں ایک عام شہری کی ہلا کت کیخلاف مکمل ہڑتال کی جارہی ہے۔ کشمیر میں اکثر دکانیں بند جبکہ دیگر کاروباری ادرے بھی مقفل ہیں۔ہڑتال کی کال حریت کانفرنس (گ) کے چیئر مین سید علی گیلانی نے دے رکھی ہے۔ انہوں نے یہ ہڑتال فورسز کے ہاتھوںذاکر کی ہلاکت اور نایئر پلوامہ میں نامعلوم بندوق برداروں کے ہاتھوں ظہور احمد نامی شہری کی ہلاکت کیخلاف احتجاج کیلئے دے رکھی ہے۔ وادی بھر سے موصولہ اطلاعات کے مطابق پبلک ٹرانسپورٹ بند ہے تاہم پرائیویٹ گاڑیاں چل رہی ہیں۔ حکام نے کہا کہ کولگام اور پلوامہ کے چند علاقوں میں لوگوں کی نقل وحمل پر پابندیاں عاید کی گئی ہیں۔ حکام نے وادی بھر میں آج مسلسل دوسرے روز بھی سبھی تعلمی ادارے بند رکھنے کا اعلان کر رکھا ہے جبکہ ٹرین سروس بھی معطل رکھی گئی ہے۔  

تازہ ترین