تازہ ترین

رافیل معاملے پر ہنگامہ کے سبب راجیہ سبھا کی کارروائی پیر تک ملتوی

نئی دہلی// کانگریس سمیت تمام اپوزیشن ارکان نے رافیل طیارے سودے کے سلسلے میں راجیہ سبھا میں جمعہ کو بھاری شور شرابہ کیا جس کی وجہ سے ایوان کی کارروائی دن بھر کے لئے ملتوی کر دی گئی۔چیئرمین ایم وینکیا نائیڈو نے صبح ایوان کی کارروائی شروع کرتے ہوئے ضروری دستاویزات ایوان کے ٹیبل پر رکھوائے ۔ انہوں نے مختلف جماعتوں کے ارکان کا نام پکارا اور کہا کہ ان سبھی نے مختلف معاملات پر بحث کے لئے نوٹس دیا ہے ۔ چیئرمین ان سبھی سے اتفاق کرتے ہیں اور ان سبھی پر بحث کی جائے گی۔ اس سے پہلے مرکزی انسانی وسائل کی ترقی کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے کہا کہ یونیورسٹیوں میں درج فہرست ذات و قبائل اور دیگر پسماندہ طبقات کے اساتذہ کے ریزرویشن کے معاملے پر حکومت سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی عرضی دائر کرے گی اور یہ مسترد ہونے کی صورت میں آرڈیننس یا بل لائے گی۔ انہوں نے کہا کہ جب تک صورتحال واضح نہیں ہوتی، یونیورسٹیوں میں بھ

اپوزیشن رافیل کے ’مردے‘ میں جان ڈالنے کی کوشش کر رہی ہے :نرملا سیتارمن

نئی دہلی// رافیل جنگی طیارہ سودے میں بے ضابطگی کا 'جنون' لوک سبھا میں جمعہ کو ایک بار پھر ظاہر ہوا، جہاں متحدہ اپوزیشن نے اس معاملے کی تحقیقات کے لئے مشترکہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) قائم کرنے کا مطالبہ کیا ، وہیں حکومت نے کہا کہ اپوزیشن پارٹی 'مردے میں جان ڈالنے ' کی کوشش کررہی ہے ۔ رافیل سودے میں وزیر اعظم کے دفتر کی کھلی مداخلت پر وزارت دفاع کے ایک افسر کے اعتراض سے متعلق خط ایک انگریزی اخبار میں شائع ہونے کے بعد رافیل کا 'جنون' ایک بار پھر ایوان میں ظاہر ہوا اور وقفہ سوالات میں کانگریس، ترنمول کانگریس اور تلگودیشم پارٹی (ٹی ڈی پی) کے ہنگامے کی وجہ سے ایوان کی کارروائی دوپہر 12 بجے تک کے لئے ملتوی کرنی پڑی۔دوبارہ کارروائی شروع ہونے پر وقفہ صفر کے دوران ہاتھوں میں اخبار کی کاپیاں لئے اپوزیشن ارکان کے ہنگامے کے درمیان ہی وزیر دفاع نرملا سیتا رمن نے کہا کہ رافی

لوک سبھا انتخابات کے لئے چھتیس گڑھ کو اے ٹی ایم کے طور پر استعمال کرے گی:مودی

رائے گڑھ// وزیراعظم نریندر مودی نے آج چھتیس گڑھ کی نومنتخب حکومت کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا ہے کہ پارٹی کو لوک سبھا انتخابات کے لئے ریاست کو اپنا ‘اے ٹی ایم’ بنانا چاہتی ہے اور اس لئے نئی حکومت نے مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) کو ریاست میں نہیں آنے دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔مسٹر مودی نے یہاں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ چھتیس گڑھ میں نئی حکومت سے نئی شروعات کی امید تھی لیکن حکومت میں آتے ہی دو فیصلے کئے گئے ۔ پہلا آیشومان بھارت اسکیم کو چھتیس گڑھ سے ختم کرنے کا اور دوسرا سی بی آئی کو ریاست میں نہیں آنے دینے کا فیصلہ کیا گیا۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ رائے پور سے دہلی تک کانگریس کی سلطنت دلالوں اور بچولیوں کے مضبوط نیٹ ورک سے چلتی ہے اور اس لئے حکومت آیوشمان اسکیم سے باہر نکل گئی۔ اس اسکیم میں جھوٹ کا کوئی امکان نہیں ہے ۔ اب کانگریس اس طرح کی اسکیم لائے گی جس

چوکیدار بھی اور چور بھی ہیں مودی :راہل

نئی دہلی// کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی پر رافیل سودے میں من مانی کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ اب یہ ثابت ہو گیا ہے کہ مسٹر مودی چوکیدار بھی ہیں اور چور بھی ہیں۔کانگریس ہیڈ کوارٹر میں منعقدہ پریس کانفرنس میں مسٹر گاندھی نے کہا کہ رافیل گھپلے کی پرتیں مسلسل کھل رہی ہیں۔ ایک اخبار میں شائع خبر کا حوالہ دیتے ھوئے انہوں نے کہا کہ وزارت دفاع کے افسران نے بھی کہا ہے کہ رافیل سودے میں وزیر اعظم کے دفتر نے من مانی کرکے طریقہ عمل کی خلاف ورزی کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزارت دفاع کے حکام کے انکشاف سے صاف ہو گیا ہے کہ فرانس کے سابق صدر اولاندے نے جو کچھ کہا تھا وہ درست ہے اور مسٹر مودی نے ملک کے عوام کے 30 ہزار کروڑ روپے انل امبانی کی جیب میں ڈالے ہیں۔کانگریس کے صدر نے رافیل سودے کی پارلیمنٹ کی مشترکہ کمیٹی سے جانچ کرانے کا مطالبہ دہراتے ہوئے کہا کہ اگر اس سودے میں گڑبڑی