تیسرے مرحلے میں سخت سکیورٹی کے درمیان پولنگ آج

نئی دہلی// سات مرحلوں میں ہونے والے لوک سبھا کے انتخابات کے تیسرے مرحلے کی پولنگ کے لیے تمام تیاریاں مکمل کر لی گئیں ہیں اور سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ 15 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام حلقوں کی 116 سیٹوں کے لیے گذشتہ روز صبح سات بجے سے شام چھ بجے تک ووٹنگ ہوگی۔ اس کے ساتھ ہی اڈیشہ اسمبلی کی 42 سیٹوں کے لیے بھی ووٹ ڈالے جائیں گے ۔ اس مرحلے میں 13 ریاستوں اور دو مرکز کے زیر انتظام ریاستوں کے کئی قدآور رہنماؤں کی انتخابی قسمت کا فیصلہ ہوگا۔ اس مرحلے میں سماجوادی پارٹی(ایس پی) کے بنیاد گزار ملائم سنگھ یادو، اعظم خاں، جیا پردہ، شیوپال سنگھ یادو، سنتوش گنگوار اور ورون گاندھی جیسے بڑے رہنماانتخابی میدان ہیں۔ لوک سبھا الیکشن کے اس مرحلے میں جن سیٹوں پر پولنگ ہوگی ان میں آسام کی چار، بہار کی پانچ، چھتیس گڑھ کی سات، گجرات کی تمام 26،گوا کی دو، جموں و کشمیر کی ایک، کرناٹک کی 14، کیر

بی جے پی پورے ہندستان میں این آر سی نافذ کرے گی:امیت شاہ

کلکتہ//ملک کی سالمیت کیلئے این آرسی کے ملک بھر میں نفاذ کو ناگزیر بتاتے ہوئے بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ نے آج کلکتہ میں کہا ہے کہ ہندوؤں کو این آر سی کے نام پر خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔پڑوسی ممالک کے اقلیتی طبقہ کو ہندستانی شہریت دی جائے گی۔کلکتہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے کہا کہ پہلے دو مرحلے میں بنگال میں جن پانچ سیٹوں پر پولنگ ہوئی ہے ا س میں بی جے پی کو سبقت حاصل ہے ۔ریاست کے عوام نے ممتا بنرجی کو اقتدار سے بے دخل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔ممتا بنرجی کے دور اقتدار میں ریاست میں ترقیاتی کام نہیں ہوئے ۔ریاست میں جمہوریت نام کی کوئی چیز باقی نہیں ہے ۔بنگال میں اب وقت تبدیلی کا ہے ۔انہوں نے بتایاکہ بی جے پی نے اپنے انتخابی منشور میں واضح طور پر کہا ہے کہ بنگلہ دیش، پاکستان اور افغانستان سے آنے والے ہندو، بودھ،سکھ،جین اور عیسائی رفیوجیوں کو ہندستانی شہریت دی ج

’چوکیدا کو سزا ملے گی‘

نئی دہلی//کانگریس صدر راہل گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ جاری رکھتے ہوئے آج پھر کہا کہ غریبوں کو لوٹ کر امیردوستوں کو فائدہ پہونچانے والے چوکیدار کوسزا ملے گی۔مسٹر گاندھی نے ٹوئٹ کیا ‘‘23مئی کو عوام کی عدالت میں فیصلہ ہوکر رہے گا کہ کمل چھاپ چوکیدار چور ہے ۔ انصاف ہوکر رہے گا۔ غریبوں کو لوٹ کر امیر دوستوں کو فائدہ پہنچانے والے چوکیدار کو سزا ملے گی۔’’اس سے قبل کانگریس کے میڈیا انچارج رندیپ سنگھ سرجے والا نے اپنے ٹوئٹ میں کہا ‘‘ بھاجپائی جھوٹ کی کوئی انتہا نہیں ہے ۔افواہوں کا کوئی معیار نہیں اور مکاری کی کوئی حد نہیں ۔ سپریم کورٹ میں راہل جی کے جواب پر گمراہ کرنا بی جے پی والوں کے ذریعہ عدالتی کارروائی کی صریح مجرمانہ توہین ہے ۔ معاملہ کورٹ میں زیر غور ہے ۔ آج ہی فیصلہ کرکے ورغلانہ بند کردیجئے ۔’’مسٹر گاندھی رافیل سودے کے سلسلے م

آئندہ مہینوں ہندوستان کا شمار | دنیا کے5 بڑے ممالک میں ہوگا:راجناتھ

بیکانیر//مرکزی وزارت داخلہ راجناتھ سنگھ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کچھ مہینوں میں ہندوستان دنیا کے ٹاپ 10 ممالک کی فہرست میں پانچویں نمبر پر ہوگا۔ مسٹر سنگھ آج بیکانیر پارلیمانی سیٹ سے بی جے پی کے امیدوار ارجن میگھوال کی حمایت میں کپلمنی کی تپستھلی شریکولایت میں انتخابی ریلی سے خطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ برسوں میں آتے آتے دینا کے ٹاپ تین ممالک روس ، چین، امریکہ میں کسی ایک ملک کو پیچھے چھوڑتے ہوئے ہندوستان ٹاپ تین ممالک میں شامل ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا کے لوگ مسٹر مودی کی تعریف کررہے ہیں۔ آزاد ہندوستان کی تاریخ میں پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ جب پوری دنیا میں تیزی سے ترقی کرنے والی معیشت کی بدولت ہمارا ملک چھٹے مقام پر پہنچ گیا ہے ۔ سنہ 2014 میں جب مودی کی قیادت میں اقتدار سنبھالی گئی تھی اس وقت دنیا کے ٹاپ ممالک میں جہاں ہندوستان نووی

آئندہ مہینوں ہندوستان کا شمار | دنیا کے5 بڑے ممالک میں ہوگا:راجناتھ

بیکانیر//مرکزی وزارت داخلہ راجناتھ سنگھ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کچھ مہینوں میں ہندوستان دنیا کے ٹاپ 10 ممالک کی فہرست میں پانچویں نمبر پر ہوگا۔ مسٹر سنگھ آج بیکانیر پارلیمانی سیٹ سے بی جے پی کے امیدوار ارجن میگھوال کی حمایت میں کپلمنی کی تپستھلی شریکولایت میں انتخابی ریلی سے خطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ برسوں میں آتے آتے دینا کے ٹاپ تین ممالک روس ، چین، امریکہ میں کسی ایک ملک کو پیچھے چھوڑتے ہوئے ہندوستان ٹاپ تین ممالک میں شامل ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا کے لوگ مسٹر مودی کی تعریف کررہے ہیں۔ آزاد ہندوستان کی تاریخ میں پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ جب پوری دنیا میں تیزی سے ترقی کرنے والی معیشت کی بدولت ہمارا ملک چھٹے مقام پر پہنچ گیا ہے ۔ سنہ 2014 میں جب مودی کی قیادت میں اقتدار سنبھالی گئی تھی اس وقت دنیا کے ٹاپ ممالک میں جہاں ہندوستان نووی

شاہراہ قدغن پرعدالت عظمیٰ میں عرضی کی سماعت | مرکز ی و ریاستی حکومتوں کے نام نوٹس جاری

نئی دہلی//عدالت عظمیٰ نے سوموار کو مرکزاور ریاستی حکومت سے ادھمپورسے بارہمولہ تک شاہراہ پرحفاظتی وجوہات کی بناپر ہفتہ میں دودن سول ٹریفک کی نقل وحرکت پر پابندی کاحکم کالعدم قراردینے کیلئے دائرعرضی پر دوہفتوں کے اندرجواب طلب کیا۔ریاستی حکومت نے 3اپریل کوایک حکم جاری کیا جس میں کہا گیا تھا کہ پلوامہ حملہ ، بانہال میں حفاظتی فورسزکی کانوائے پرایک کار بم حملے اورلوک سبھاانتخابات کیلئے فورسز کی نقل وحرکت کے پس منظر میں قومی شاہراہ پر ہفتے میں دودن صبح4بجے سے5بجے شام تک سول ٹریفک کے چلنے پر پابندی عائد ہوگی۔ حکمنامے میں کہاگیاہے کہ ہفتے میں دودن اتواراوربدھوار کوحفاظتی فورسزکی کانوائے کی نقل وحرکت کے پیش نظر بارہ مولہ سے ادھمپورتک قومی شاہراہ پر سول گاڑیوں کے چلنے کی صبح4بجے سے5بجے تک پابندی ہوگی ۔یہ پابندی حکمنامے کے مطابق31مئی تک لاگو رہے گی ۔اس حکمنامے کے خلاف دائرعرضی کی سوموار کو چیف جس

تازہ ترین