ممتا بنرجی نے کی استعفیٰ کی پیشکش

 کلکتہ//مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ اورترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) سربراہ ممتا بنرجی نے استعفیٰ کی پیشکش کرکے ہنگامہ مچا دیا ہے۔ لوک سبھا الیکشن کے آئے نتائج میں خراب کارکردگی کے بعد ہفتہ کو بلائی گئی پارٹی کی میٹنگ میں ممتا بنرجی نے اپنے استعفیٰ کی پیشکش کر کے سب کوحیران کردیا۔انہوں نیکہا کہ اب میں ریاست کی وزیراعلیٰ نہیں رہنا چاہتی ہوں۔ انہوں نے کہا کہ وہ پارٹی کی سربراہ بنی رہیں گی، لیکن اب وزیراعلیٰ نہیں رہنا چاہتیں۔ اس بیان کے بعد ترنمول کانگریس کے سبھی لیڈروں نے اس سے نااتفاقی ظاہرکی۔ حالانکہ بعد میں ممتا بنرجی نے کہا کہ پارٹی چاہتی ہے کہ وہ وزیراعلیٰ بنی رہیں، اس لئے وہ اس عہدے پرابھی برقرار رہیں گی۔ممتا بنرجی نیکہا کہ سینٹرل فورسیز نے ہمیشہ ہمارے خلاف کام کیا ہے۔ ریاست میں ایمرجنسی جیسے حالات بنا دیئیگئے۔ممتا بنرجی نے کہا کہ سینٹرل فورسز نے ہمیشہ ہمارے خلاف کام کیا ہے۔ ریاست

راہل کی استعفی کی پیشکش، ورکنگ کمیٹی کو نامنظور

نئی دہلی//کانگریس صدر راہل گاندھی نے کانگریس ورکنگ کمیٹی کی میٹنگ میں لوک سبھا انتخابات میں شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے لیکن پارٹی کی اولین پالیسی ساز یونٹ نے انہیں استعفی نہ دینے کو کہا ہے ۔کانگریس کے ذرائع کے مطابق پارٹی کی اولین پالیسی ساز یونٹ کانگریس ورکنگ کمیٹی کی ہفتہ کو لوک سبھا انتخابات میں پارٹی کی کارکردگی اور پارٹی کو مضبوط بنانے کی حکمت عملی پر بات چیت کے لئے منعقد اجلاس میں مسٹر گاندھی نے عام انتخابات میں پارٹی کی شکست کے لئے خود کو ذمہ دار مانتے ہوئے استعفی دینے کی پیشکش کی لیکن کمیٹی کے تمام ارکان نے متفقہ طور سے ان سے ایسا نہیں کرنے کے پر زور دیا۔ ورکنگ کمیٹی کی میٹنگ صبح 11 بجے شروع ہوئی۔میٹنگ میں متحدہ ترقی پسند اتحاد کی صدر سونیا گاندھی، سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، پارٹی جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال، سینئر لیڈر اے کے انٹونی، پرینکا گ

مہاراشٹر کانگریس صدراشوک چوان مستعفی!

ممبئی//لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی کی شکست فاش کے بعد استعفوںکا دورشروع ہوچکا ہے اور مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی (ایم پی سی سی ) کے صدراور سابق وزیراعلیٰ اشوک چوان نے بھی استعفیٰ دینے کا من بنالیا ہے ،جبکہ ذرائع کے مطابق انہوںنے اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا اور کہا کہ ریاست اور ملک بھر میں جہاں جہاں کانگریس کو ہارکا سامنا کرنا پڑا ہے ،وہاں کے عہدیداران استعفیٰ دے دیں ۔واضح رہے کہ مہاراشٹر میں کانگریس نے چندرپور سے ایک نشست پر کامیابی حاصل کی ہے جبکہ اس کی حلیف این سی پی کو چار نشستیں حاصل ہوئی ہیں ،آئندہ چھ مہینے میں مہاراشٹراسمبلی کے انتخابات ہیں اور دونوں میں انتخابی سمجھوتہ کے بارے میں چہ مہ گوئیاں شروع ہوچکی ہیں ،ویسے امکان ہے کہ دونوں میں سمجھوتہ ہوجائے اور یہی ان کے لیے بہتر ہوگا۔خوداشوک چوان کو شکست کامنہ دیکھنا پڑا جبکہ سشیل کمار شندے سمیت کئی اہم لیڈرہار گئے ہیں۔چوان ک

کرناٹک حکومت کو خطرہ نہیں: جی ٹی دیوے گوڑا

بنگلورو//کرناٹک کے اعلی تعلیم کے وزیر جی ٹی دیوے گوڑا نے سنیچر کو کہا کہ ہمیں حالیہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج سے سبق لینا چاہئے لیکن ریاست میں کانگریس۔جنتادل (سیکولر) اتحاد حکومت کو کوئی خطرہ نہیں ہے ۔مسٹر دیوے گوڑا نے کہاکہ یہ ہمارے لئے بڑا سبق ہے ۔ اتحاد کے لیڈروں کو شکست تسلیم کرنی چاہئے اور ہمیں عوام کے فیصلے کا احترام کرنا چاہئے ۔ اعلی تعلیم کے وزیر نے یہاں نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ یہ سچ ہے کہ انتخابات میں ووٹروں نے ہمیں مسترد کردیا ہے لیکن اس فیصلے سے اتحادی حکومت کے لئے کوئی خطرہ نہیں ہے کیونکہ ہم نے ریاست کے لوگوں کی خدمت کے لئے ایک دوسرے سے ہاتھ ملایا ہے اور حکومت اپنی پانچ برس مدت کار مکمل کرے گی۔جنتادل (ایس) کے سینئر لیڈر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ سابق وزیراعظم ایچ ڈی دیو گوڑا سمیت تمام لیڈروں نے عوام کے فیصلے کو تسلیم کیا ہے ۔ سابق وزیراعظم تمکور لوک سبھ

جگن موہن ریڈی وائی ایس آرکانگریس لیجسلیچر پارٹی لیڈر منتخب

 حیدرآباد//وائی ایس آرکانگریس پارٹی کے صدر جگن موہن ریڈی وائی ایس آرکانگریس لیجسلیچر پارٹی لیڈر منتخب ہوگئے ۔تاڑے پلی میں واقع وائی ایس آرکانگریس کے کیمپ آفس میں منعقدہ مقننہ پارٹی کے اجلاس میں جگن کو لیڈر منتخب کرلیاگیا۔وائی ایس آرکانگریس کے رکن اسمبلی بوتسا ستیہ نارائنا نے جگن کو وائی ایس آرکانگریس مقننہ پارٹی لیڈر منتخب کرنے کی قرارداد پیش کی۔ارکان اسمبلی دھرمناپرساد راو اور کولوسو پارتھاسارتھی نے بعد ازاں یہ تجویز پیش کی جس کو منظورکرلیاگیا۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے جگن نے کہاکہ عوام کے بھروسہ کے نتیجہ میں ان کو اقتدار ملا ہے ۔اے پی میں 50فیصد رائے دہی ایک اچھی بات ہے ۔انہوں نے کہاکہ ناانصافی کی سزا خدا دیتا ہے ۔انہوں نے کہاکہ وائی ایس آرکانگریس کے 23ارکان اسمبلی کو تلگودیشم میں شامل کیاگیا تھالیکن اب صورتحال یہ ہوگئی ہے کہ تلگودیشم پارٹی صر ف 23ارکان اسمبلی تک ہی محدود ہوکر ر

لوک سبھا انتخابات میں جیتے 233 لیڈروں پر مجرمانہ معاملات

نئی دہلی//سیاست کو جرم سے پاک کرنے کی تمام کوششوں کے باوجود الیکشن جیت کر 17ویں لوک سبھا کے رکن بنے لیڈروں میں سے 233(43فیصد) کے خلاف مجرمانہ معاملات درج ہیں۔نامزدگی داخل کرتے وقت دیئے گئے حلف ناموں سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ جیتنے والے امیدواروں میں سے 159(29فیصد) کے خَاف سنگین مجرمانہ معاملات درج ہیں۔ ان میں عصمت دری، قتل، قتل کی کوشش، اغوا اور خواتین کے خلاف جرائم وغیرہ شامل ہیں۔نیشنل الیکشن واچ کے تخمینہ کے مطابق دس نومنتخب اراکین پارلیمنٹ نے تو مجرمانہ معاملات میں سزا ہونے کی بات تک قبول کی ہے ۔ ان میں سے پانچ بھارتیہ جنتا پارٹی کے ٹکٹ پر منتخب ہوئے ہیں جبکہ چار کانگریس اور ایک وائی ایس آر کانگریس کے امیدوار طورپر جیتے ہیں۔ ان میں سے چار ترقی پسند ریاست کیرالہ سے جبکہ دو مدھیہ پردیش سے اور ایک ایک امیدوار اترپردیش، راجستھان، مہاراشٹر اور آندھراپردیش ے کامیاب ہوئے ہیں۔کانگریس کے ٹکٹ

کوچنگ سینٹرمیں آگ لگنے سے20 لوگوں کی موت

سورت //سورت کے سرتھانہ علاقہ میں واقع تکش شیلا نام کی عمارت میں آگ لگنے کے بعد لوگوں نے بتایا کہ فائربریگیڈ وٹ پرنہیں پہنچی۔ وزیراعظم مودی نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے گجرات حکومت کو فوری راحت دینے کا حکم دے دیا ہے۔سورت کے سرتھانہ علاقہ میں واقع تکش شیلا نام کی عمارت میں جمعہ کو بھیانک آگ لگ گئی۔ اس دوران بتایا جارہا ہے کہ عمارت میں 30 سے زائد بچے پھنس گئے۔ یہ ایک کمرشیل بلڈنگ ہیاوراس میں موجود کوچنگ سینٹرمیں بچے اس کیایک فلورپرپھنس گئے۔ اس حادثہ میں تقریبا 20 لوگوں کی موت ہوگئی ہے اورکئی دیگرزخمی بھی ہوئے ہیں۔ اس دوران بچوں نے جان بچانے کے لئے عمارت سے چھلانگ لگا دی۔وہیں وزیراعظم نریندر مودی نے اس حادثے پرافسوس کا اظہارکرتے ہوئے گجرات حکومت کو فوراً راحت پہنچانے کا حکم دے دیا ہے۔ گجرات کے وزیراعلیٰ وجے روپانی نے حادثے پرانتہائی افسوس کا اظہارکیا اوراس کی جانچ کے عدالتی احکامات دے دیئ

کوئٹہ: نماز جمعہ کے دوران دھماکہ، 3 ہلاکتیں، 25 زخمی

اسلام آباد//پاکستان میں کویٹہ کے پشتون آباد علاقے میں رحمانیہ مسجد کے پاس جمعہ کو جمعہ کی نمازکے دوران ہوئے دھماکے  میں کم ازکم تین افراد ہلاک اور25 زخمی ہوگئے ہیں۔یہ دھماکہ پشتون آباد کے علاقے میں رحمانیہ مسجد کے اندر ہوا۔پشتون آباد پولیس کے ایک اہلکار نے بی بی سی کے نامہ نگار محمد کاظم کو بتایا کہ دھماکہ مسجد رحمانیہ کے اندر نماز جمعہ کے خطبے کے دوران ہوا۔دھماکے کے باعث مسجد میں بھگڈر مچ گئی جبکہ اس کے شیشے ٹوٹ کر صفوں پر بکھر گئے۔ بتایا کہ وہ مسجد کے قریب اپنے گھر میں وضو کر رہا تھا کہ زوردار دھماکہ ہوا۔دھماکے کے فوراً بعد وہ بھاگتا ہوا مسجد پہنچ گیا جہاں لوگ مسجد کے اندر زخمی حالت میں پڑے ہوئے تھے۔انھوں نے کہا کہ مسجد کے اندر شیشے بھی بکھرے ہوئے تھے جن سے وہ خود بھی زخمی ہو گئے۔نادر خان کے مطابق انھوں نے دیگر افراد کے ہمراہ زخمی افراد کو سول ہسپتال منتقل کرنا شروع کیا۔دھما

۔543 ارکان کی لوک سبھا میں گنتی کے مسلمان

 نئی دہلی//لوک سبھا الیکشن 2019 کے نتائج کا اعلان کردیا ہے۔ ملک میں ایک بارپھر مودی سرکارآئی ہے۔ بی جے پی نے اپنے دم پر303 سیٹوں کے ذریعہ واضح اکثریت حاصل کرلی ہے جبکہ قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) نے 353 سیٹیں حاصل کی ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں کو ایک بارپھرناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اس ضمن میں گزشتہ لوک سبھا الیکشن کے مقابلے اس بارمسلم اراکین پارلیمنٹ کی تعداد میں معمولی اضافہ ہوا ہے۔پورے ملک میں اس بار27 مسلمانوں نے جیت حاصل کی ہے۔ جبکہ 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں 20 مسلمان منتخب ہوکرپارلیمنٹ پہنچے تھے۔ اس طرح سے اس بار مسلم نمائندگی میں اضافہ ضرور ہوا ہے۔ لوک سبھا الیکشن 2019 میں مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اورپارلیمنٹ میں مسلمانوں اورمظلوموں کی آوازاسدالدین اویسی کوتلنگانہ کے حیدرآباد سیایک بارپھرشاندارکامیابی حاصل ہوئی ہے۔ جبکہ ان کی ہی پارٹی کیٹکٹ پرمہاراشٹرکیاورنگ آباد

مودی نے راہل اور اپوزیشن جماعتوں کا شکریہ ادا کیا

نئی دہلی//وزیر اعظم نریندر مودی نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لوک سبھا انتخابات میں شاندار کامیابی حاصل کرنے پر مبارکباد اور نیک تمناؤں کے لئے کانگریس کے صدر راہل گاندھی اور دیگر اپوزیشن پارٹیوں کے لیڈروں کا شکریہ ادا کیا ہے ۔مسٹر مودی نے جمعرات دیر رات ٹویٹ کیا، ‘‘آپ کی نیک تمناؤں کے لئے شکریہ’’۔ مسٹر گاندھی نے انہیں مبارکباد دیتے ہوئے لکھا تھا، ‘‘میں ہندوستان کے عوام کے فیصلے کو قبول کرتا ہوں۔ فاتحین کو مبارکباد، مسٹر مودی اور قومی جمہوری اتحاد کو مبارک ہو’’َ۔وزیر اعظم نے پنجاب کے وزیر اعلی کیپٹن امریندر سنگھ کے مبارک پیغام کا جواب دیتے ہوئے لکھا، ‘‘میں پنجاب میں آپ کی پارٹی کی اچھی کارکردگی کے لیے آپ مبارک باد دیتا ہوں۔ میں پنجاب کے فلاح و بہبود کے لئے آپ کے ساتھ کام کرنا چاہتا ہوں’’۔اسی طرح انہوں نے ڈراوڈ

اسمرتی نے امیٹھی کے عوام کا شکر ادا کیا

نئی دہلی // بھارتیہ جنتا پارٹی کی سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی نے اترپردیش میں امیٹھی لوک سبھا سیٹ پر جیت درج کرانے کے لئے امیٹھی کے لوگوں کا شکریہ ادا کیا ہے ۔ محترمہ ایرانی نے جمعہ کو ایک ٹویٹ کرکے کہا، ‘‘ایک نئی صبح امیٹھی کے لئے ، ایک نیاعہد ، شکریہ امیٹھی ‘ صد صد سلام ، آپ نے ترقی پر اعتماد کیا ہے ، کمل کا پھول کھلایا ۔ امیٹھی کا شکریہ’’۔محترمہ ایرانی نے اتر پردیش میں گاندھی خاندان کے روایتی امیٹھی سیٹ سے کانگریس کے صدر راہل گاندھی کو شکست دی ہے ۔   

تازہ ترین