تازہ ترین

بھاری برفباری کے بعد دھوپ کھلی

کشتواڑ// لگاتار دو دنوں تک بھاری برفباری کے بعد جمعہ کے روز کشتواڑ میں دھوپ کھلنے سے لوگوں نے راحت کی سانس لی۔بھاری برفباری سے پورے ضلع میں معمول کی زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی او رجمعہ کے روز دھوپ کھلنے سے لوگوں نے اپنا باقاعدہ کاروبار دوبارہ شروع کیا ۔جمعہ کی صُبح کو طلاب کو خوشی خوشی ٹیویشن مراکز جاتے دیکھا گیا ۔بازاروں میں تقریباً دو فٹ برف کے بعد جمعہ کے روز لوگوں نے بازار کا رُخ کیا اور اشیائے ضروریہ کی خریداری میں مشغول رہے کیونکہ اگلی منگل سے مزید برفباری کی پیشنگوئی ہے۔کشتواڑ کے متعدد مسافروں نے کشمیر اعظمیٰ سے بات کرتے ہوئے اپنے مسائل اُبھارے ،جن میں بجلی،پانی کی باقاعدہ سپلائی، راشن اور تیل خاکی کی دستیابی شامل ہیں۔نوجونوں نے موبائیل اور انٹرنیٹ کے باقاعدہ رابطہ کا مطالبہ کیا۔کشتواڑ کے ایک مقامی باشندے ہارون احمد نے کہا کہ گُذشتہ دو دنوں کی برفباری سے ضلع میں سڑکوں کا رابطہ منق

ضلع رام بن میں بھاری برفباری سے عوامی مشکلات میں اضافہ

بانہال // بھاری برفباری اور برفانی تودوں کی زد میں آنے سے ضلع رام بن کے کھڑی مہو منگت ، رامسو ، پوگل پرستان اور گول سنگلدان کے علاقوں میں درجنوں رہائشی مکانوں کو سخت نقصان پہنچا ہے جبکہ درجنوں مکان بھاری برفباری کی وجہ سے دب گئے ہیں اور بھاری تعداد میں پھلدار درختوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ ضلع کے کھڑی اڑپنچلہ ، مہو، منگت ، ارم ڈکہ ، کڈجی ، باوا ، اکھرن ،آڑ مرگ ، ہجوا ، ترگام ، کملہ ، نیل ، رامسو ، چکہ سربگھنی، دردہی ،اہمہ ، سوجمتنہ ،براڈ گڑی ، پوگل پرستان اور سینابتی کے درجنوں دیہات میں بھاری برفباری کی وجہ سے ہزاروں کی آبادی رسل ورسائیل کے تمام رابطوں سے منقطع ہے اور بنیادی ضروریات کی کمی اور عدم موجودگی کی وجہ سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ ضلع رام بن میں برفباری سے پیدا ہوئی صورتحال کے حوالے سے ڈپٹی کمشنر رام بن شوکت ایجاز بٹ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ضلع رام بن کے قصبوں میں بجل

ڈی سی رام بن کا بٹوت میں اشیائے ضروریہ کے سٹاک کا جائزہ

رام بن //ضلع ترقیاتی کمشنر شوکت اعجاز بٹ نے جمعہ کے روز بٹوت کا دورہ کرکے وہاں اشیائے ضروریہ کے سٹاک پوزیشن اور ضروری خدمات کی بحالی کا جائزہ لینے کے علاوہ برف ہٹانے کے کام کا معائینہ کیا اور اس سلسلہ میں عوام سے فیڈ بیک حاصل کیا۔ڈی سی کے ہمراہ اے ڈی سی ڈاکٹر بشارت حسین،سی ایم او ڈاکٹر سیف الدین خان ، ایگزیکٹو انجینئر پی ڈی ڈی اور دیگر محکموں کے افسران بھی موجود تھے ۔ دورہ کے دوران انہوں نے بٹوت سے پتنی ٹاپ تک سڑکوں اور لنک روڈوں سے برف ہٹانے کے کام کا جائزلینے کے علاوہ متاثرہ علاقوں میں بجلی ،پانی سپلائی کی بحالی اور اشیائے ضرورئی کی دستیابی کا جائزہ لیا۔انہوں نے متعلقہ افسروں سے تمام لنک روڈوں کو جلد از جلد بحال کرنے کی ہدایت دی۔انہوں نے پانی، بجلی اور سڑک رابطہ کو بحال کرنے کا کا م جنگی سطح پر شروع کی گئی ہے۔انہوں نے راشن ،ایل پی جی تیل خاکی و دیگر اشیائے کی دستیابی کا معائینہ کیا ا

ریکارڈ توڑ برفباری سے معمولات زندگی مفلوج

بھدرواہ // وادی چناب میں جمعرات کو ہوئی ریکارڈ توڑ برفباری نے پورے خطہ خصوصاً وادی بھدرواہ ،جہاںپر بہت برفباری ہوئی ہے، میں معمول کی زندگی مفلوج ہوئی ہے،جسکی وجہ سے بجلی کی سپلائی میں خلل، ٹریفک میں رخنہ پڑا ہے اور یہاں تک کہ سیب کی کاشت و دیگر فصلوں کو کافی نقصان ہوا ہے۔پورا خطہ بدھ کے روز سے بغیر بجلی کے ہے اور جمعہ کے روز تمام سڑکیں دوسرے دن بھی بند رہیں۔مقامی لوگوں نے انتظامیہ پر موسم میں بہتری آنے کے باوجود بھی بحالی کام شروع نہ ہونے پر انتظامیہ کی سخت تنقید کی ہے،جسکی وجہ سے اشیائے ضروریہ جیسے کہ بجلی، سڑکوں کی بحالی ،پینے کے پانی کی سپلائی،سرکاری راشن اورتیل خاکی کی سپلائی متاثر ہوئی ہے۔ایک مقامی باشندے نیرج سنگھ منہاس نے کہا کہ سول انتظامیہ پوری طرح سے ناکام رہی ہے کیونکہ لازمی خدمات کی بحالی کیلئے بھی کام شروع نہیں کی گئی ہے اور ایسا لگ رہا ہے کہ انتظامیہ خواب غفلت میں سوئی ہ

ممنکوٹ، چسانہ میں رہائشی مکان منہدم

ریاسی //ضلع میںبھاری برفباری سے تحصیل چسانہ کے ممنکوٹ علاقہ میں ایک مکان کو کافی نقصان ہوا ہے۔اطلاعات کے مطابق موضع ممنکوٹ کے نور حسین ولد مکھنا کا رہائشی مکان بھاری برفباری کی وجہ سے منہدم ہو گیا ہے۔منہدم ہونے کی وجہ سے مکان میں موجود تمام سامان دب کر رہ گیا ہے،تاہم کسی بھی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔دریں اثنا ایک اور بیوہ فاطمہ بیگم ساکن شیڈول کے مکان کو بھی برفباری سے کافی نقصان ہوا ہے۔لیکن کنبہ بروقت نزدیکی مکان میں منتقل ہوا تھا ،جس کی وجہ سے کوئی مالی یا جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔ دریں اثناء پی ڈی پی کے ضلع صدر شفیق الرحمان نے برفباری سے مکانات کو ہوئے نقصان کے لئے معاوضہ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔  

لداخ کو صوبہ کا درجہ خوش آئند

کشتواڑ// ریاستی انتظامیہ کی جانب سے لداخ کو صوبہ کا درجہ دئیے جانے کے فیصلہ کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے پی ڈی پی ایم ایل سی ٹاک فردوس نے آج کہا کہ اگر لداخ الگ صوبہ کے درجہ کا مستحق ہے تو خطہ چناب بھی مکمل الگ درجہ کاحق رکھتا تھا ہے لہذا ریاستی انتظامیہ کو خطہ چناب کے جانب یکساں نظر رکھنی چاہئے۔اپنے بیان میں ٹاک نے بتایا کہ خطہ چناب ہر لحاظ سے ایک درجہ کا مستحق ہے جس کے لئے پی ڈی پی پچھلے چار سالوں سے مکمل جدوجہد کررہی رہی البتہ کچھ غیر ترقیاتی عناصر اپنے ذاتی سیاسی مفادات کے لئے اس ترقیاتی شدہ جدوجہد کو ہر وقت ناکام کرنے کی کوشش کرتے ہیں ۔ اپنے بیان میں بھارتیہ جنتا پارٹی کو نشانہ بناتے ہوئے ٹاک نے بتایا کہ بی جے پی واحد جماعت ہے جس نے خطہ چناب کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک برتا ہے جبکہ اسی جماعت نے پچھلے اسمبلی انتخابات میں خطہ چناب سے بھاری جیت حاصل کی تھی لیکن بدقسمتی سے آج اس سیاسی

مزید خبرں

درد ذہِ میں مبتلا2خواتین بذریعہ ہیلی کاپٹر بانہال سے جموں منتقل محمد تسکین   بانہال // محکمہ صحت بانہال کی درخواست پر ضلع انتظامیہ رام بن نے درد زہ مین مبتلا دو خواتین کو بانہال سے بذریعہ ہیلی کاپٹرجموں کے ہسپتال منتقل کیا ہے۔ گذشہ رات درد زہ میں مبتلا انتہائی ہائی رسک کی دو خواتین کو داخل کیا گیا لیکن ہسپتال میں بیہوش کرنے والے ڈاکٹر کے لمبی چھٹی پر ہونے اور متبادل ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے بانہال ہسپتال انتظامیہ نے یہ معاملہ ایس ڈی ایم اور تحصیلدار کی نوٹس میں لایا جنہوں نے معاملہ ڈپٹی کمشنر رام بن کی نوٹس میں لایا۔ذرائع نے بتایا کہ اس کے بعد صوبائی انتظامیہ نے دونوں خواتین کوبانہال سے جموں ہسپتال منتقل کرنے کیلئے ہیلی کاپٹرکا انتظام کیا اور جمعہ کی دوپہر بعد دونوں مریضہ جمیلہ بیگم زوجہ رئیس احمد ساکنہ نیل بانہال اور شاہدہ بیگم زوجہ سجاد احمد ساکنہ ناگام بانہال کو جمو