تازہ ترین

شدید بارشوں سے سیلابی صورتحال پیدا

بھدرواہ //پیر کے روز بھدرواہ میں شدید بارشوں سے سیلابی صورتحال پیدا ہوئی جس دوران گھاٹھا۔ہنگاسڑک کا حصہ بہہ گیا جبکہ مکی کی فصل کو بھی بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا۔ہنگاگائوں سے تعلق رکھنے والے دیو رتن نے بتایاکہ پیر کی شام ساڑھے پانچ بجے تیز ہوائوں کے ساتھ شدید بارش ہوئی جس سے ندی نالوں میں طغیانی پیدا ہوئی اور صورتحال سیلابی منظر پیش کرنے لگی ۔ انہوں نے بتایاکہ اس دوران مکی کی فصل کو نقصان پہنچا جبکہ ہنگانالہ سے سڑک کا 100میٹر حصہ بہہ گیا ۔گائوں کے ایک اور شہری ماسٹر ٹیک چند نے بتایاکہ ہنگانالہ عبور کرنا مشکل ہے اور بڑی تعدادمیں لوگ نالے کے آر پار درماندہ ہوکر رہ گئے ہیں ۔ہنگاکے شیر سنگھ نے بتایاکہ یہ مقامی سیاسی قیادت کی ان کے تئیں عدم توجہی کا نتیجہ ہے ،وہ پچھلی کئی دہائیوں سے پل تعمیر کرنے کی مانگ کررہے ہیں لیکن اس پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی اورآج انہیں مشکلات کاسامناہے ۔سڑک کا حصہ

دچھن میں مواصلاتی نظام دو ہفتوں سے مکمل ٹھپ

کشتواڑ//ضلع کشتواڑ کا دورافتاہ علاقہ دچھن دورجدید میں بھی مواصلاتی سہولیات سے محرومی سے دوچار ہے۔ علاقہ میں واحد مواصلاتی نظام فراہم کرنے والی کمپنی پچھلے دو ہفتوں سے مکمل طور بند پڑی ہے جس کے سبب لوگوں کو کافی مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔ مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ علاقہ میں بی ایس این ایل اپنی خدمات انجام دے رہی تھی  جس کے سبب لوگ ضلع و ریاست  کے دیگر لوگوں سے جڑے رہتے تھے لیکن پچھلے پندرہ روز سے مواصلاتی نظام بالکل ٹھپ پڑاہے ۔ایساپہلی بار ایسا نہیں ہوا کہ علاقہ میں مواصلاتی نظام ٹھپ ہو گیا ہو بلکہ اس سے قبل بھی یہی سلسلہ چلتا آرہا ہے،لیکن انتظامیہ غفلت کی نیند سوئی ہوئی ہے۔ کمپنی کی طرف سے نصب کئے گئے ٹاور میں اگر معمولی سی خرابی بھی آتی ہے تو اسے ٹھیک کرنے میں کئی ہفتے و مہینے بھی لگ جاتے ہیں جس کا خمیازہ مقامی آبادی کو بھگتناپڑتا ہے۔ مقامی نوجوان فردوس اح

کنتواڑہ میںبارشوں سے فصلوں و میوہ باغات کو بھاری نقصان

کشتواڑ//ضلع کشتواڑ سے 25کلومیڑ دور پہاڑی پر واقع گائوں علاقہ کنتواڑہ میں طوفانی ہوائوں و تیز بارشوں سے فصلوں و میوہ باغات کو کافی نقصان پہنچا ہے۔کچھ روز سے مسلسل تیز ہوائوں و بارشوں نے علاقے میں مکی کی کھڑی فصل و میوہ باغات کو تباہ کر دیا ہے جس سے علاقے کا زمیندار طبقہ کافی پریشان ہے۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ کھیتی ہی انکا ذریعہ معاش ہے اور ان کا سال بھر کا انحصار بھی اسی پر ہوتاہے لیکن طوفانی بارشوں نے ان کی محنت پر پانی پھیر دیا ہے اور تمام فصل تباہ ہو گئی جس سے آنے والے مہینوں میں وہ فاقہ کشی کا شکار بھی ہوسکتے ہیں ۔لوگوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ابھی تک ضلع انتظامیہ کا کوئی بھی آفیسر یہاں نہیں آیا جو نقصان کا تخمینہ لگاتا۔انہوںنے ضلع ترقیاتی کمشنر سے اپیل کی کہ وہ علاقہ میں آفیسران کی ٹیموں کو بھیج کر نقصان کا تخمینہ لگوائیں اوران کو معاوضہ فراہم کیاجائے ۔  

مہو میں ساہتیہ اکادمی کی طرف سے کشمیری ادبی پروگرام منعقد

بانہال // ساہتیہ اکاڈمی نئی دہلی کی طرف سے بانہال کے دوردراز گائوں مہو میں اپنی نوعیت کا پہلا کشمیری ادبی پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ کشمیری ادبی پروگرام میں ایک سمپوزیم کا اہتمام کیا گیا تھا۔’ وادی چنا بس منز کاشر ادبک ارتقا ‘کے عنوان کے تحت 5 کشمیری مقالہ نگاروں نے پانچ مقالے پڑھے۔ مقالہ نگاروں میں منشور بانہالی ، شبیر حسین شبیر ، فاروق رفیع آبادی ، ظاہر بانہالی اور بمبور یوسف شامل تھے۔ اس کے علاوہ  وادی چنابس منز کاشر عقدیتی ادب ً عنوان کے تحت منشور بانہالیــ’ وادی چناب تہ کاشر زبان ‘کے عنوان کے تحت شبیر حسین شبیر’ وادی چنابس متز کاشر افسانہ‘ عنوان کے تحت ظاہر بانہالی ’ وادی چنابس منز کاشر غزل ‘کے عنوان کے تحت فاروق رفیع آبادی اور’ مہو منگتھس منز کاشر شاعر تہ ادیب ‘عنوان کے تحت بمبور یوسف نے مقالات پڑھے۔ساہتیہ اکاڈمی

ریاسی میں پہلی پولٹری ایسٹیٹ قائم

ریاسی //ریاسی میں پہلی پولٹری ایسٹیٹ قائم کی جارہی ہے جس کیلئے انتظامیہ کی طرف سے 150کنال اراضی کی فراہمی کا یقین دلایاگیاہے ۔ڈائریکٹر اینمل ہسبنڈری محکمہ جموں ڈاکٹر ٹی ایچ بیگ نے اس بات کا اعلان اپنے دورہ ٔکٹرہ و ریاسی کے دوران کیا ۔انہوں نے مجوزہ جگہ کا معائنہ بھی کیا اور محکمہ تعمیرات عامہ کو ہدایت دی کہ وہ اس پروجیکٹ کو 10اگست سے قبل مکمل کریں ۔ اس سلسلے میں ایک میٹنگ بھی ہوئی جس میں محکمہ کی کارکردگی کاجائزہ لیاگیا ۔بعد ازآں ڈائریکٹر نے ڈپٹی کمشنر ریاسی اندو کنول چب سے بھی میٹنگ کی اور ضلع میں پولٹری ایسٹیٹ کے قیام پر تبادلہ خیال کیا ۔  

آنگن واڑی مراکز کی نگرانی کا اختیار

ڈوڈہ //جموں وکشمیر پنچایت کانفرنس نے آنگن واڑی مراکز کی نگرانی کے اختیارات پنچایتوں کو تفویض کئے جانے کے فیصلے کی سراہنا کرتے ہوئے گورنر انتظامیہ کا شکریہ اد اکیاہے ۔ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پنچایت کانفرنس کے ریاستی سیکریٹری محمد صدیق سرپنچ پنچایت حلقہ بھابور نے کہاکہ گورنرانتظامیہ کے فیصلے کو من و عن عملایاجاناچاہئے تاکہ محکمہ سماجی بہبود کی طرف سے چلائی جارہی آئی سی ڈی ایس سکیم کو مزید بہترڈھنگ سے چلایاجائے اورمقوی غذا کی فراہمی کا خواب پورا ہوسکے ۔انہوں نے کہاکہ مستحقین کو ان سکیموں کا فائدہ پہنچناچاہئے اور اسی سے ان کی فلاح و بہبود ہوسکتی ہے ۔ اس موقعہ پر شاہنواز خان و دیگران بھی موجو دتھے ۔  

مزید خبرں

این ایچ پی سی ورکر یونین کا اساتذہ سے یکجہتی کا اظہار کشتواڑ// این ایچ پی سی ورکر یونین کے صدر اشتیاق احمد ملک نے اساتذہ تنظیموں کی حمایت کرتے ہوئے ضلع ترقیاتی کمشنر کشتواڑ انگریز سنگھ رانا کے فیصلوں کی مذمت کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ یونین ضلع کشتواڑ میں اساتذہ طبقہ ،پرنسپل، ایچ او ڈیز ، لیکچرارز، ماسٹرز، آر ای ٹی اساتذہ کے ساتھ ہے ۔یہاں جاری پریس بیان میں ورکر یونین کے صدر اشتیاق احمد ملک نے کہا کہ ڈی سی کشتواڑ ضلع کا پرامن ماحول خراب کرنا چاہتے ہیں اوروہ سرکاری محکمہ جات میں رشوت ستانی کو چھپانے کے بجائے اساتذہ تنظیموں کی آواز کو دبانا چاہتے ہیں۔اشتیاق ملک نے کہا کہ مذہبی بھائی چارے ،رنگ ،ذات پات کے بغیر تمام اساتذہ نے پرامن طریقے سے ڈی سی کشتواڑ کے متنازعہ حکمنامے کے خلاف احتجاج کیا تھا جو ان کا جمہوری حق تھا لیکن اس مسئلے کو حل کرنے کے بجائے موصوف نے ان کو دھمکی دی اور ان کے اعل