تازہ ترین

بجلی چوری کی روکتھام کیلئے پری پیڈ میٹر نصب کریں

  جموں// کمشنر سیکرٹری پاور ہردیش کمار نے افسروں کی ایک میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے ریاست میں جاری مرکزی معاونت والی شعبہ¿ بجلی سے متعلق جاری سکیموں کی پیش رفت کا جائیزہ لیا۔میٹنگ میں ڈیولپمنٹ کمشنر پاور، سیکرٹری ٹیکنیکل پی ڈی ڈی، ای ایم آر ای وِنگ جموں ، کشمیر اور لداخ کے چیف انجینئرز، ایس اینڈ او وِنگ کشمیر اور جموں کے چیف انجینئرز، پروجیکٹ وِنگ کشمیر اور جموں کے چیف انجینئرز اور دیگر متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔ہردیش کمار نے میٹنگ میں ریاست میں سوبھاگیہ سکیم کے تحت صد فیصد گھروں کو بجلی فراہم کرنے کے مبارک باد دی جس کی بدولت جموں وکشمیر کو سوبھاگیہ ایوارڈ حاصل ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چونکہ ہمارا مقصد لوگوں کو چوبیس گھنٹے بجلی فراہم کرنا ہے اس لئے بجلی کو نظام کو مزید استحکام بخشنے کی ضرورت ہے۔ہردیش کمار نے اس موقعہ پر مرکزی حکومت کی طرف سے چلائے جارہے تمام پروجیکٹوں پر

جامعہ جموں میں منعقدہ’جشن گلزار ‘اختتام پذیر

 جموں //جموں یونیورسٹی کی جانب سے منعقدہ 3روزہ ’جشن گلزار‘اختتام پذیر ہو گیا ۔جموں یونیورسٹی اور ڈیپارٹمنٹ آف سٹوڈنٹ ویلفیئر کے اشتراک سے شعبہ اردو کی جانب سے گیان چند سیمینار ہال میں منعقدہ ختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے معروف مصنف گلزار نے کہاکہ اردو زبان نے ہندوستانی تحریک آزادی میں ایک اہم رول ادا کیا جبکہ مذکورہ زبان ہندوستانی تہذیب کا اہم جز ءہے جوکہ ہندوستان میں پیدا ہوئی اور اس وقت دنیا کے کئی ایک ممالک میں بولی جارہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ اردو زبان کو کسی ایک مذہب یا فرقہ کےساتھ نہیں جوڑا جاسکتا کیونکہ اس زبان نے بغیر کسی مذہب و ملت کے کئی ایک شاعروں کو جنم دیا ہے جنہوں نے اس زبان کو فروغ دینے میں ایک رول ادا کیا ہے ۔انہوں نے اردو زبان کی جانب سے فرقہ ورانہ ہم آہنگی کو برقرار رکھنے اور قومی یکجہتی کو بحال رکھتے ہوئے ملکی عوام کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کیا ۔موصوف نے

کسانوں کا وفد زرعی یونیورسٹی وائس چانسلر سے ملاقی

جموں //کسانوں کے ایک وفد نے زرعی یونیورسٹی جموں سے ملاقی ہوا ۔اس موقعہ پر کسانوں نے وائس چانسلروں کو فصلوں کی پیدا وار اور متعلقہ محکمہ کی جانب سے فراہم کی جارہی سہولیات کے بارے میں جانکاری فراہم کی ۔وفد نے فصلوں کے سلسلہ میں درپیش مسائل کے بارے میں جانکاری فراہم کی گئی ۔وائس چانسلر نے کسانوں کو یقین دلاتے ہوئے کہاکہ سکاسٹ یونیورسٹی جموں کی جانب سے ان کو ہر ایک شعبہ میں ہر ممکن سہولیات فراہم کی جاینگی ۔انہوں نے کہاکہ یونیورسٹی کے مختلف شعبوں کی جانب سے کرشی وگیان کیندر کے ذریعہ کسانوں کو جدید ٹیکنالوجی ،فصلوں کی بہترین پیدا وار اور بیجوں کے علا وہ دیگرسہولیات فراہم کی جارہی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ جموں میں اعلیٰ معیار کے چاولوں کی فصل کی پیدا وار کے سلسلہ میں یونیورسٹی کی جانب سے جلد ہی ورکشاپ کا اہتمام کیا جائے گا جس کے دوران ماہرین کسانوں کو جدید تکنیکوں کے بارے میں جانکاری فراہم کرینگے

۔43جن او شدھی کیندروں کے قیام کا سلسلہ جاری

 جموں//عوام کو کم نرخوں پر معیاری ادویات فراہم کرنے کی غرض سے پرنسپل سیکرٹری صحت و طبی تعلیم اتل ڈولو نے ایک میٹنگ میں جن اوشدھی کیندروں اور امرت سٹورز کے قیام کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں جموں میڈیکل کالج کی پرنسپل ڈاکٹر سنندا رینہ ، ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر /جموں اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی۔میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے پرنسپل سیکرٹری نے کہا کہ پردھان منتری جن اوشدھی کیندر سکیم کا مقصد عوام خاص کر غریب اور پسماندہ طبقوں کو کم لاگت پر معیاری ادویات فراہم کرنا ہے۔انہیں بتایا گیا ہے کہ ریاست میں موجود 43 ایسے کیندروں میں سے 25کو نجی صنعت کاروں جب کہ باقی ماندہ کو سرکار کی طرف سے چلایا جارہا ہے۔پرنسپل سیکرٹری نے متعلقین کو ہسپتالوں کے احاطوں میں جن اوشدھی کیندروں کے قیام کے لئے جگہ کی نشاندہی کرنے کی ہدایت دی ۔انہیں بتایا گیا کہ سرکاری ہسپتالوں میں اِن کیندروں کے قیام کے لئے 24مقامات کی

تکنیکی مداخلت سے فائنانشل کارپوریشن کو فعال بنایا جاسکتا ہے:کے کے شرما

جموں//گورنر کے صلاح کار کے کے شرما نے فائنانشل کارپوریشنوں کے کام کاج کو مزید فعال بنانے پر زور دیا ہے۔اُنہوں نے جموں اینڈ کشمیر سٹیٹ فائنانشل کارپوریشن کے بورڈ آف ڈائریکٹرس کی ایک میٹنگ میں ان باتوں کا اِظہار کیا۔میٹنگ میں پرنسپل سیکرٹری فائنانس اے کے مہتا ، منیجنگ ڈائریکٹر جے کے ایف سی اور بورڈ آف ڈائریکٹرس کے علاوہ دیگر متعلقین نے شرکت کی۔میٹنگ کے دوران صلاح کار کو فائنانشل کارپوریشنوں کے کام کاج اور خدمات سمیت دیگر امور کے بارے میں جانکاری دی گئی ۔صلاح کار نے کہا کہ اِن کارپوریشنوں کو مزید فعال بنانے کے لئے تکنیکی مداخلت اور اختراعی اقدامات کی اشد ضرورت ہے تاکہ یہ دستکاروں اور دیگر منسلک صنعتوں کو معاونت فراہم کرسکے۔اُنہوں نے کارپوریشنوں کو جدید تقاضوں پر فروغ دینے اور انہیں منافع بخش بنانے کے لئے انسانی وسائل کی تشکیل نو اور اہداف کو وقت پر مکمل کرنے کے احکامات دئیے۔اُنہوں نے افسر

میونسپل کارپوریشن کی لفافوں کےخلاف مہم شروع

جموں //جموں میونسپل کارپوریشن کی جانب سے لفافوں کے غیر قانونی استعمال کےخلاف مہم شروع کی گئی جس کے دوران بھاری مقدار میں لفافوں کو ضبط کر لیا گیا ۔جموں مئیر چندر موہن گپتا کی ہدایت پر کارپوریشن کے ہیلتھ آفیسرکی طرف سے ایک ٹیم تشکیل دی گئی تاکہ ایس آر او 45آف 2017کی عمل آوری کو یقینی بنایا جائے ۔اس ٹیم کی طرف سے نروال سبزی منڈی ،میوہ مارکیٹ ،نروال چوک ودیگر علاقوں میں کاروائی عمل میں لائی گئی جس کے دوران ٹیم نے 5کوئنٹل ممنوع لفافے ضبط کرتے ہوئے قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کو 14ہزار روپے جرمانہ بھی کیا ۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر کے کہ جموں میں روزانہ 350ٹن گندگی پید ہو تی ہے جس میں 20فیصد سے زائد ممنوع لفافے شامل ہوتے ہیں جوکہ قدرتی ماحولیاتی توازن کو برقرار رکھنے میں اہم رول ادا کر رہے ہیں ۔جموں میونسپل کارپوریشن کے ہیلتھ آفیسر نے کہا ہے کہ غیر قانونی طور پر لفافوں کو جمع کرنے والوں کے

پارلیمانی انتخابات کے سلسلہ میں گجروال موڑ میں بھاجپا کا اجلاس

جموں //آئندہ پارلیمانی انتخابات کے سلسلہ میں جموں مغرب اسمبلی حلقہ میں بھاجپا کارکنوں کا ایک اجلاس منعقد ہو ا ۔بھاجپا کے سابقہ ریاستی صدر ست شرما کی قیادت میں منعقدہ اجلاس کے دوران آئندہ پارلیمانی انتخابات کے سلسلہ میں پارٹی کی جانب سے کی جارہی تیاریوں کے سلسلہ میں بات چیت کی گئی ۔گجروال موڑ کے مقام پر منعقد اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ست شرما نے کہاکہ بھاجپا کی مرکزی حکومت کے دور میں ملکی عوام کی فلاح و بہبود کےلئے کئی ایک اسکیموں کو شروع کیا گیا۔اس اجلاس کے دوران انہوں نے گجروال موڑ میں ایک کمیونٹی ہال کا سنگ بنیاد بھی رکھا ۔موصوف نے کہاکہ 2014میں بھاجپا کے اقتدار میں آنے کے بعد ملک میں ہر ایک شعبہ کو نئی سمت کی جانب گامزن کر دیا گیا ہے ۔انہوں نے پارٹی کارکنوں سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ بھاجپا کو زمینی سطح پر مضبوط بنانے کےلئے عوامی مسائل کو اجاگر اور حل کروانے میں اپنا رول ادا کریں ۔اس

مزید خبرں

 محکمہ مال کے ریکارڈ کی ڈیجٹائزیشن کا پروگرام  ریاست میں 6کروڑ60لاکھ دستاویزات سکین کرنے کا ہدف مقرر اب تک تقریباً 3کروڑ دستاویزات سکین،مزید کام جاری نیوز ڈیسک   جموں//فائنانشل کمشنر مال ڈاکٹر پون کوتوال نے ایک میٹنگ کے دوران ڈیجیٹل انڈیا لینڈ ریکارڈس ماڈرنزیشن پروگرام کی عمل آوری کاجائزہ لیا۔اس موقعہ پر انہوں نے کہا کہ اراضی کے ریکارڈاور اس سے منسلک تمام معاملات میں جدید کاری لائی جانی چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ ریاست میں 660 لاکھ دستاویزات سکین کئے جائیں گے جن میں سے 362لاکھ کشمیر جبکہ 298لاکھ جموں میں سکین کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اب تک 29792251دستاویزات سکین کئے جاچکے ہیں جن میں سے 13740767کشمیر جبکہ 16051484 جموں صوبے میں سکین کئے گئے ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ بہتر نتائج حاصل کرنے کے لئے مزید تن دہی اور لگن کے ساتھ کام کرنا چاہیئے ۔انہوں نے کہا کہ یہ