تازہ ترین

’جموں اینڈ کشمیر ۔ایسیز اِن سوسائٹی ، کلچر اینڈ پالیٹکس‘‘

جموں//گورنر ستیہ پال ملک کو یہاں راج بھون میں یونیورسٹی آف جموں کے شعبہ سوشالوجی کی سربراہ پروفیسر ابھا چوہان نے ایک کتاب ’’ جموں اینڈ کشمیر ۔ ایسیز اِن سوسائٹی ، کلچر اینڈ پالیٹکس ‘‘ پیش کی ۔گورنر نے پروفیسر چوہان کی اُن کاوشوں کو سراہا جن کے تحت اُنہوں نے اِس کتاب کی اِدارت کی اور اُن کے روشن مستقبل کے لئے دعا کی  

ادھم پور پارلیمانی حلقے میں لوگوں نے تبدیلی کےلئے ووٹ دیا: وکرم ادتیہ سنگھ

 جموں// ادھم پور پارلیمانی حلقہ انتخاب کے کانگریس امیدوار وکرم ادتیہ سنگھ نے کہا کہ حلقے میں لوگوں نے تبدیلی کے لئے ووٹ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تعمیر و ترقی اور روزگار کی فراہمی میں ناکامی کے بعد اب بی جے پی والے ایئر اسٹرائیکس اور دوسری چیزوں کے نام پر لوگوں سے ووٹ مانگ رہے ہیں۔وکرم اتیہ سنگھ نے جمعرات کو ضلع کٹھوعہ میں پولنگ مراکز کا دورہ کرتے ہوئے نامہ نگاروں کو بتایا 'لوگ پورے جوش و خروش کے ساتھ اپنا حق رائے دہی استعمال کررہے ہیں۔ مجھے پوری امید ہے کہ اس بار لوگ تبدیلی کے لئے ووٹ کریں گے اور مجھے جتائیں گے'۔انہوں نے بی جے پی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا 'بی جے پی کو بھروسہ ہی نہیں ہے کہ ان کے امیدوار جیت پائیں گے۔ وزیر اعظم مودی ڈاکٹر جتیندر سنگھ کے حق میں ریلی سے خطاب کرنے کے لئے یہاں آئے تھے لیکن انہوں نے اپنی تقریر میں ڈاکٹر جتیندر سنگھ کا نام تک نہیں لیا۔ ی

بی جے پی نے ملک کے عوام کو دھوکہ دیا: چوہدری لال سنگھ

 جموں// ڈوگرہ سوابھیمان سنگٹھن کے چیئرمین اور ادھم پور پارلیمانی حلقہ انتخاب کے امیدوار چوہدری لال سنگھ نے بی جے پی پر پورے ملک میں لوگوں کو دھوکہ دینے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ادھم پور سے بھاجپا رکن پارلیمان ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے اس پارلیمانی حلقے میں زمینی سطح پر کوئی کام نہیں کیا ہے۔لال سنگھ جو بی جے پی کے رکن اسمبلی و ریاستی وزیر رہ چکے ہیں، نے جمعرات کو ووٹ ڈالنے کے بعد نامہ نگاروں کو بتایا 'جتیندر سنگھ کو یہ پتہ نہیں کہ ان کے گھر کے ووٹ کہاں ہیں؟ ان کے بھائی اور بھابھی کے ووٹ کہاں ہیں؟ ہماری ایک نئی جماعت ہے لیکن ہمیں ہر ایک جگہ امید سے زیادہ لوگوں کا تعاون حاصل ہوا۔ اس کے برعکس ڈاکٹر جتیندر جہاں بھی گئے وہاں لوگوں نے انہیں گھیرا، ان سے سوالات کئے، بہت سے جگہوں سے انہیں بھاگنا پڑا'۔انہوں نے کہا 'بی جے پی کے پاس کوئی لائق امیدوار نہیں ہے۔ یہ لوگ اتنے بے شرم ہ

جموں میئر کا شہر کے متعدد علاقوں کا دورہ

جموں//شہر کے عوام کو بہتر بنیادی سہولیات فراہم کرنے کےلئے اپنی مہم کو جاری رکھتے ہوئے جموں میونسپل کارپوریشن کے مئیر چندر موہن گپتا نے جمعرات کے روز وارڈ نمبر 38 کے نصیب نگر،جانی پور ہاﺅسنگ کالونی، بوٹا نگر علاقوں کا دورہ کیا۔ایک بیان کے مطابق دورے کے دوران انکے ہمراہ کونسلر سریندر شرما ، ایگزیکٹو انجینئر (UEED)تاج چودھری، ہیلتھ افسر ڈاکٹر سلیم خان ، ایگزیکٹو انجینئر محکمہ صحت عامہ، جے ایم سی کے ٹرانسپورٹ افسر و متعدد محکموں کے دیگر افسران بھی موجود تھے۔مئیر نے عام لوگوں کی جانب سے ابھارے گئے مسائل کا جائزہ لیا، جن میں گلیوں اور نالیوں سے ملبہ ہٹانا ، بہتر صفائی و ستھرائی، مناسب فاگنگ، آوارہ مویشوں کو اٹھانا ،پانی کی پائپوں کے رساﺅ کو بند کرنا ، وارڈ میں صاف وشفاف پانی مہیا کرنا ، اور وارڈ میں نالوں کی مرمت وغیرہ شامل تھے۔مئیر نے وراڈ نمبر 38 کے مسائل جنگی بنیادوں پر حل کرنے کی متعلقہ

نوجوان ریاست میں سیاسی استحکام کےلئے اپنا کردار ادا کریں:سلاتھیہ

وجے پور//نیشنل کانفرنس کے ریاستی سیکرٹری و سابقہ وزیر سرجیت سنگھ سلاتھیہ نے نوجوانوں سے ریاست میں سیاسی استحکام ،اس کی خوشحالی، امن و ترقی کے لئے ایک اہم کردار نبھانے کی تلقین کی۔ایک بیان کے مطابق سلاتھیہ یہاں جمعرات کے روز نیشن کانفرنس میں شامل ہوئے نوجوانوں سے خطاب کر رہے تھے۔اپنے خطاب میںانہوںنے نوجوانوں کی توانائی کو صیح سمت میں استعمال کرکے انہیں فیصلہ لینے کا موقعہ فراہم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس نے اس سمت میں بہت کُچھ کیا ہے۔ریاست کی ریاست میں ایک سرگرم رول نبھانے کی امید کا ذکر رکتے ہوئے انہوں نے نوجوانوں سے آگے آنے اور لوگوں کے مشکلات حل کرنے میں لوگوں کے پاس جانے کی تلقین کی۔انہوںنے کہا کہ پارٹی کی مقبولیت کی وجہ سے یہ ریاست میں ایک قدرتی انتخاب بن گیا ہے۔انہوں نے نئے کارکنوں سے سماجی۔اقتصادی بدلاﺅ کا ایک حصہ بننے کو کہا۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشم

ہمالین ہیڑیٹیج میوزیم کی جانب سے عالمی ہیرٹیج دن منایا گیا

جموں //ہمالین ہیریٹیج میوزیم (عجائب گھر) نے جمعرات کے روز یہاں عالمی ہیریٹیج کے مناسبت سے ایک پروگرام کا اہتمام کیا۔ایک بیان کے مطابق جے اینڈ کے لو پپیڈ ایمپلائز فیڈریشن کے صدر عبدالمجید خان اس موقعہ پر مہمان خصوصی تھے۔انہوں نے ایچ ایچ ایم کے چیئرمین کی جانب سے متعدد قسم کے نایاب بیش قیمتی اشیا جمع کرنے کے لئے انکی ستائش کی۔انہوں نے کہا کہ یہ اشیا ہمارے قدیم آرٹ ،کلچر و تہذیب کے سنہری دور کی ایک جھلک ہے،جنھیں محفوظ اور بچا کے رکھنا ایک عام آدمی کے لئے بہت ہی مہنگا ہوگا،اسلئے ایسی تنظیمیں بے شک ان قدیم اور منفرد اشیا کو محفوظ رکھنے میں سرکا رکی معاونت کرتے ہیں،جو ریاست کے دور دراز علاقوں میںبکھرے پڑے ہیں اور جو ان نایاب اشیا کی قیمتوں سے بے خبر ہیں۔اس موقعہ پر میوزیم (عجائب گھر) میں متعدد قدیم اشیا نمائش کے لئے رکھی گئی تھیں۔زندگی کے تمام طبقوں کے لوگوں نے نمائش میں بھاری تعداد میں شرکت

گورنر کو پروفیسر چوہا ن نے ’جموں اینڈ کشمیر ۔ایسیز اِن سوسائٹی ، کلچر اینڈ پالیٹکس“ کتاب پیش کی

جموں//گورنر ستیہ پال ملک کو آج یہاں راج بھون میں یونیورسٹی آف جموں کے شعبہ سوشالوجی کی سربراہ پروفیسر ابھا چوہان نے ایک کتاب ” جموں اینڈ کشمیر ۔ ایسیز اِن سوسائٹی ، کلچر اینڈ پالیٹکس “ پیش کی ۔گورنر نے پروفیسر چوہان کی اُن کاوشوں کو سراہا جن کے تحت اُنہوں نے اِس کتاب کی اِدارت کی اور اُن کے روشن مستقبل کے لئے دعا کی۔  

کٹھوعہ کے نوجوانوں نے بہتر کام ،تعلیمی اداروں اور پُر امن سماج کےلئے ووٹ کیا

 کٹھوعہ //بدنام زمانہ رسانہ عصمت ریزی معاملہ کی شکایات کو در کنار کرتے ہوئے ،موضع کے نوجوانوں نے بہتر کام کے مواقعے فراہم کرنے، زیادہ سے زیادہ اعلیٰ تعلیمی ادارے قائم کرنے،کاروبار کے لئے پر امن ماحول کی ترجیحات کے لئے اپنا ووٹ دیا ۔پہلی بار وٹ ڈالنے والے نوجوانوں نے قانون سازوں سے امتیاز برتنے اور فرقہ وارانہ کشیدگی کو بہترکل کے لئے بدلنے کی چاہت کا اظہار کیا اورا نہیں ریاست کی ترقی کو اپنا مین ایجنڈا بنانے کو کہاہے۔پٹہ۔رسانہ کے ایک باشندے راہل کمار نے اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد کہا کہ میں نے اپنے ضمیر کے مطابق ووٹ ڈالا اہے۔اس نے کہا کہ گذشتہ ایک سال سے انکے گاﺅں میں لوگ بٹ گئے ، وہ ایک دوسرے سے الگ تھلگ ہو گئے ۔ اس نے کہا کہ گاﺅں میںبھائی چارہ اور رواداری غائب ہے اورمُجھے توقع ہے کہ میرے ووٹ سے ہم اُس امید وار ک انتخاب کریں گے،جو سماج میں روا داری لائے گی اورایک پر امن زندگی گزارنے می

مزید خبرں

ایس ٹی و پہاڑی طلاب کے جائز سکالرشپ کو واگزار کرنے کا مطالبہ  جموں// ایک نامور دانشور و سماجی کارکُن ڈاکٹر شہزاد ملک نے ایس ٹی و پہاڑی طلاب کے جائز سکالرشپ کو واگُذار کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ایک بیان میںانہوںنے متعلقہ افسروں سے کہا ہے کہ وہ شیڈولڈ ٹرائب اور پہاڑی طبقہ کے طلاب کے سکالرشپ کے ساتھ کوئی چھیڑ چھاڑ نہ کرے۔انہوں نے مرکزی و ریاستی سرکار سے ایس ٹی و پہاڑی طلاب کا سکالرشپ بر وقت واگذار کرنے کا مطالبہ کیا ہے،تاکہ سماج کے اس کمزور طبقہ کے طلاب کو کئی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔انہوں نے کہا کہ اس طبقہ کے طلاب کا سرکاری سکالر شپ پر ہی انحصار ہے لیکن انتظامیہ انہیںبر وقت سکالرشپ واگُذار کرنے میں کوئی سنجیدگی نہیں دکھا رہے ہیں ،جسکی وجہ سے ان طلاب کو گونا گوں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔انہوں نے سرکاری افسروں پر مبینہ الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سکالرشپ کی رقم واگُذار ک